International

لندن میں اس سال چاقو کے وار سے پندرواں قتل

111views

برطانیہ میں چاقو کے وار سے قتل کرنے میں واقعات میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔ برطانیہ میں غمزدہ خاندانوں نے متنبہ کیا ہے کہ چھرا گھونپنے کے جرائم کا مقابلہ کرنے میں ناکامی ایک قومی بحران کی شکل اختیار کر رہی ہے۔ اس سال دارالحکومت لندن میں اب تک ایک روشنی اور مضحکہ خیز سکول کی طالبہ 15 ویں شخص بن گئی ہے جو کم عمری میں اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھتی ہے۔

15 سالہ ایلین اینڈم کے دل شکستہ والدین نے کہا کہ ان کی زندگی تباہ ہو کر رہ گئی جب بدھ کے روز ہائی سکول کی طالبہ کی گردن میں چھرا گھونپ دیا گیا تھا۔ وہ جنوبی لندن کے کروڈن میں اپنے سکول جاتے ہوئے حملے کا شکار ہوگئی۔

یہ خاندان ان 14 دیگر خاندانوں میں شامل ہے جو اس سال لندن میں جرائم اور تشدد کی وجہ سے اپنے نوعمر بیٹے یا بیٹی کے کھو جانے سے غمزدہ ہیں۔ ان میں سے 13 کی موت چھریوں کے وار سے ہوئی۔

یہ خوفناک تعداد گزشتہ سال ہونے والی اموات کی کل تعداد سے بڑھ چکی ہے۔ گزشتہ برس یہ تعداد 14 تھی۔ سال 2021 میں نوعمروں قتل کی سب سے زیادہ اموات ریکارڈ کی گئی تھیں۔ اس سال 30 بچوں کو قتل کردیا گیا تھا۔

اس صورت حال کی روشنی میں چھرا گھونپنے کے جرائم کا مقابلہ کرنے والے کارکن سیاست دانوں سے مطالبہ کر رہے ہیں کہ ایسا اقدام کریں جو دیرپا اثرات کا حامل ہو۔ وقت آ گیا ہے کہ سیاست دان اکٹھے ہوں اور اپنے متعصبانہ اختلافات کو ایک طرف رکھ کر اس بات پر تبادلہ خیال کریں کہ اس اہم مسئلے کو کیسے حل کیا جائے۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.