National

پرجول ریونّا پر اب عریاں تصویریں کھینچنے کے الزام میں ایف آئی آر درج، بی جے پی کے سابق رکن اسمبلی کا بھی آیا نام

78views

سینکڑوں خواتین کے جنسی استحصال کے الزام میں قید جے ڈی ایس کے سابق رکن پارلیمنٹ پرجول ریونّا کے خلاف ایک اور ایف آئی آر درج ہوئی ہے۔ اس ایف آئی آر میں ایک متاثرہ خاتون نے پرجول ریونّا اور بی جے پی کے ایک سابق رکن اسمبلی پریتم گوڑا کو نامزد کیا ہے۔ متاثرہ کے مطابق جنسی زیادتی کے دوران پرجول ریونّا نے اس کی عریاں تصویریں کھینچیں اور پریتم گوڑا نے انہیں سوشل میڈیا پر شیئر کیا۔ پرجول ریونّا کے خلاف تین ایف آئی آر پہلے ہی درج کی جا چکی ہیں اوریہ چوتھی ایف آئی آر ہے۔

نیوز پورٹل ’ہندوستان لائیو‘ کے مطابق یہ ایف آئی آر کرناٹک پولیس کی خصوصی تفتیشی ٹیم (ایس آئی ٹی) نے درج کی ہے۔ ایف آئی آر میں متاثرہ نے یہ الزام لگایا ہے کہ پرجول نے اس کی عریاں تصاویر کھینچیں۔ جنسی ہراسانی کے دوران پرجول نے پریتم کو ویڈیو کال کیا تھا اور اس دوران پریتم نے تصویریں کھینچیں اور شیئر کیں۔ متاثرہ نے اپنی شکایت میں کہا ہے کہ جنسی زیادتی کے کلپ کو ریکارڈ کرنے اور شیئر کرنے سے اس کے پورے خاندان کو شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا۔ چوتھی ایف آئی آر میں ملزمین کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ 354 (A), 354 (D), 354 (B), 506 اور 66 E کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

ایف آئی آر میں متاثرہ نے الزام لگایا ہے کہ 33 سالہ ریونّا نے اسے جنسی طور پر ہراساں کیا اور دھمکی دی کہ اگر اس نے کسی کو بتایا تو وہ اسے اس کے خاندان سمیت جان سے مار دے گا۔ پرجول پر متاثرہ کی عریاں تصاویر لینے کا بھی الزام ہے۔ اس معاملے میں پرجول کے ساتھ پولیس نے بی جے پی کے سابق ایم ایل اے پریتم گوڑا کو بھی ملزم بنایا ہے۔ پولیس کے ذریعہ درج کی گئی ایف آئی آر کے مطابق پرجول کے خلاف جنسی ہراسانی کے معاملے میں پریتم گوڑا، کرن اور شرتھ کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ گوڑا پر سوشل میڈیا پر ان تصاویر کو شیئر کرنے کا الزام ہے جو پرجول نے مبینہ طور پر متاثرہ کے جنسی استحصال کے دوران ویڈیو کال پر ریکارڈ کی تھیں۔

واضح رہے کہ سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیو گوڑا کے پوتے پرجول ریونّا کے خواتین کی جنسی ہراسانی کے اسکینڈل نے کرناٹک سمیت پورے ملک میں ہنگامہ برپا کر دیا ہے۔ پرجول کے ساتھ اس کے والد ایچ ڈی ریونا کو بھی خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ اس کے علاوہ کرناٹک پولیس نے پرجول کے بھائی سورج کو بھی جے ڈی ایس کے ایک کارکن کے ساتھ جبراً غیر فطری تعلقات بنانے اور پھر اسے خاموش رہنے کے لیے 2 کروڑ روپے کی پیشکش کرنے کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔ سورج کیس کی جانچ سی آئی ڈی کر رہی ہے جبکہ پرجول جنسی ہراسانی کیس کی جانچ ایس آئی ٹی کو سونپی گئی ہے۔

لوک سبھا انتخابات کے دوران پرجول ریونّا سے متعلق جنسی ہراسانی کا اسکینڈل سامنے آیا تھا۔ اس وقت پرجول ریونّا جے ڈی ایس کی جانب سے ہاسن لوک سبھا سیٹ سے امیدوار تھا۔ وہ الیکشن کے نتائج آنے سے قبل ہے جرمنی فرار ہو گیا۔ ہندوستان واپسی کے بعد اسے پولیس نے گرفتار کرلیا۔ پرجول ریونّا کی جنسی ہراسانی کی شکار خواتین مسلسل آگے آ رہی ہیں۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.