International

اقوام متحدہ نے 11 جولائی کو سریبرینیکا قتل عام کی یاد کا دن قرار دیا، قرارداد پر ووٹنگ سے ہندوستان نے بنائی دوری

52views

اقوام متحدہ: یوگوسلاویہ کی تحلیل کے بعد ہونے والی خانہ جنگی کے دوران 1995 میں سریبرینیکا میں بڑے پیمانے پر قتل عام ہوا تھا۔ اب اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اس قتل عام کی یاد میں سالانہ دن منانے کی قرارداد پیش کی گئی۔ اسے منظور کرتے ہوئے 11 جولائی کو سریبرینیکا قتل عام کی یاد کا دن قرار دیا گیا ہے۔ تاہم ہندوستان نے اس قرارداد پر ووٹنگ میں شرکت نہیں کی۔

جمعرات کو 193 رکنی جنرل اسمبلی میں جرمنی اور روانڈا کی طرف سے لائی گئی قرارداد کو صرف 84 ووٹ ملے۔ اس نے مختلف ممالک کے درمیان اختلافات کو بے نقاب کیا، کیونکہ اس طرح کی قرارداد کو متفقہ طور پر منظور کیا جاتا ہے۔ انیس ممالک نے مخالفت میں ووٹ دیا، 68 غیر حاضر رہے اور 22 نے خود کو پوری طرح اس قرارداد سے دور رکھا۔ ہندوستان اس قرارداد سے کیوں دور رہا اس کی کوئی وجہ نہیں بتائی گئی۔

قرارداد کی منظوری کے بعد اقوام متحدہ ہر سال 11 جولائی کو سربرینیکا میں 1995 کی نسل کشی کا عالمی دن منائے گی۔ 1995 میں بوسنیا میں 8000 مسلمانوں کو قتل کیا گیا۔ خانہ جنگی سے نبرد آزما بوسنیا میں آزادی کے مطالبے پر احتجاج کرنے والے لوگوں کو دیکھتے ہی گولی مار دی گئی تھی۔

اقوام متحدہ میں جرمنی کے مستقل مندوب اینٹجے لینڈرٹسے نے کہا کہ ان کا ملک جرمن نازیوں کی طرف سے کی جانے والی نسل کشی کے اعادہ کو روکنے کے لیے قرارداد کی سرپرستی کر رہا ہے۔ دوسری جنگ عظیم کے دوران نازیوں نے 60 لاکھ یہودیوں کو قتل کیا۔ لینڈرٹسے نے کہا کہ یہ بوسنیا میں سربرینیکا قتل عام کے متاثرین کی یاد کو عزت دینے کے لیے ہے اور یہ سربوں کے خلاف نہیں، بلکہ صرف ان لوگوں کے خلاف ہے جنہوں نے قتل کیا۔

ہمسایہ ملک سربیا کے صدر الیگزینڈر ووچک نے اپنی تاریخ کے پیش نظر ایسی تجویز پیش کرنے پر جرمنی کے مؤقف پر سوال اٹھایا اور کہا کہ یہ سیاسی وجوہات اور سربیا کے عوام کو داغدار کرنے کے لیے پیش کیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ جن لوگوں نے یہ قتل عام کیا ان کے خلاف پہلے ہی مقدمہ چلایا جا چکا ہے، انہیں سزا سنائی جا چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ قرارداد یکطرفہ ہے۔

اس قرارداد کو مغرب اور روس کے درمیان تنازع کے تناظر میں بھی دیکھا جا رہا ہے کیونکہ سربیا ماسکو کا اتحادی ہے۔ زیادہ تر مسلم ممالک نے قرارداد پر مغرب کے ساتھ ووٹ دیا، غزہ میں قتل عام کا معاملہ بھی اٹھایا۔

Follow us on Google News