National

سنجے سنگھ نے اپنی گرفتاری کے خلاف سپریم کورٹ کا رخ کیا

78views

نئی دہلی: عام آدمی پارٹی (عآپ) کے راجیہ سبھا کے رکن سنجے سنگھ نے دہلی ہائی کورٹ کے اس حکم کے خلاف جمعہ کو سپریم کورٹ کا رخ کیا جس میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کے ذریعہ مبینہ دہلی شراب پالیسی گھوٹالہ میں ان کی گرفتاری اور ریمانڈ کو برقرار رکھا گیا تھا۔

دہلی ہائی کورٹ نے 20 اکتوبر کو سنگھ کی درخواست کو مسترد کر دیا، جس میں ای ڈی کی جانب سے منی لانڈرنگ کیس میں ان کی گرفتاری اور ریمانڈ کو برقرار رکھا گیا تھا، جو اب ناکارہ ایکسائز ڈیوٹی پالیسی میں مبینہ بے ضابطگیوں کی جاری تحقیقات میں ایجنسی کے ذریعے درج کیا گیا تھا۔

راؤز ایونیو کورٹ کے خصوصی جج ایم کے ناگپال نے 13 اکتوبر کو اس معاملے میں سنجے سنگھ کو 14 دن کی عدالتی حراست میں بھیج دیا تھا۔ سنجے سنگھ نے ای ڈی کے سامنے اپنی گرفتاری اور ریمانڈ کو چیلنج کرتے ہوئے کہا ہے کہ مالی تحقیقاتی ایجنسی نے انہیں گرفتاری کی بنیاد نہیں بتائی ہے۔

ای ڈی نے 10 اکتوبر کو جج ناگپال سے اس بنیاد پر ان کی مزید تحویل کی درخواست کی تھی کہ اس معاملہ سے متعلق ای ڈی کے کچھ خفیہ دستاویزات کے حصول کے ذریعہ کے حوالہ سے ان کا رویہ مکمل طور پر عدم تعاون والا تھا۔

ای ڈی نے جن دیگر بنیادوں پر سنجے سنگھ کی تحویل کی درخواست کی تھی وہ یہ تھی کہ انہوں نے مذکورہ نمبر اور شریک ملزم امت اروڑہ کے نمبر کے درمیان آنے والی کالوں کے سلسلے میں اپنے موبائل نمبر کے کال ڈیٹیل ریکارڈ کو قبول کرنے یا دستخط کرنے سے انکار کر دیا تھا۔

مزید بتایا گیا کہ تازہ ترین تلاشی کے دوران تقریباً 200 جی بی ڈیجیٹل ڈیٹا برآمد ہوا ہے اور اس کا تجزیہ ہونا باقی ہے، مذکورہ ڈیجیٹل ڈیٹا کے ذریعے ملزمان کا سامنا کا کام بھی مکمل نہیں ہو سکا ہے۔

دوسری طرف، سینئر وکیل ربیکا جان، جنہوں نے سنگھ کی طرف سے دلیل دی، دعوی کیا کہ ای ڈی کے پاس کیس میں ان کی حراست میں توسیع کی درخواست کرنے کی کوئی وجہ نہیں ہے۔ مالی تحقیقاتی ایجنسی نے سنگھ کو 4 اکتوبر کو نارتھ ایونیو علاقے میں ان کی رہائش گاہ پر تلاشی لینے کے بعد گرفتار کیا تھا۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.