National

سلمان خان ہاؤس فائرنگ کیس میں لارنس بشنوئی اور اس کے چھوٹے بھائی کو پولیس نے بنایا مطلوب ملزم

72views

ممبئی پولیس نے بالی ووڈ اداکار سلمان خان کے گھر کے باہر فائرنگ کے معاملے میں جیل میں بند گینگسٹر لارنس بشنوئی اور اس کے چھوٹے بھائی انمول بشنوئی کو ’مطلوب ملزم‘ بنایا ہے۔ ممبئی پولیس کی کرائم برانچ اس کیس کے تفتیش کے سلسلے میں جیل میں بند لارنس بشنوئی کو اپنی تحویل میں لے سکتی ہے۔ یہ معلومات کل (20 اپریل) کو ایک پولیس افسر نے دی ہے۔

نیوز پورٹل ’اے بی پی لائیو‘ کے مطابق پولیس نے کہا ہے کہ اس معاملے میں گرفتار وکی گپتا اور ساگر پال کو بشنوئی بھائیوں سے ہدایات مل رہی تھیں۔ فائرنگ میں بشنوئی بھائیوں کے ملوث ہونے کے بارے میں پولیس نے کہا ہے کہ لارنس بشنوئی ایک اور کیس میں گجرات کی سابرمتی سینٹرل جیل میں بند ہے مگر کہا جاتا ہے کہ اس کا بھائی کینیڈا یا امریکہ میں ہے۔ ممبئی پولیس کا کہنا ہے کہ وہ جلد ہی لارنس بشنوئی کی تحویل لے سکتی ہے۔ پولیس کی کرائم برانچ نے ایف آئی آر میں آئی پی سی کی دفعہ 506 (2) (موت کی دھمکی یا سنگین چوٹ کے ساتھ مجرمانہ دھمکی) اور 201 (ثبوت کو غائب کرنا یا مجرم کو بچانے کے لئے غلط معلومات دینا) شامل کیا ہے۔

واضح رہے کہ 14 اپریل کی صبح دو موٹر سائیکل سوار افراد نے سلمان خان کے باندرہ کے گھر ’گیلیکسی اپارٹمنٹ‘ پر 5 راؤنڈ فائر کیے تھے۔ جس کے بعد پولیس نے آئی پی سی کی دفعہ 307 (قتل کی کوشش) کے تحت ایف آئی آر درج کی تھی۔ پولیس نے گپتا اور پال کو 16 اپریل کو گجرات کے بھوج سے گرفتار کیا تھا۔ سلمان خان کے گھر کے باہر ہونے والی اس فائرنگ کی ذمہ داری انمول بشنوئی نامی شخص نے فیس بک پوسٹ کے ذریعے لی تھی۔ پولیس کے مطابق جس ’آئی پی‘ ایڈریس سے پوسٹ اپ لوڈ کی گئی تھی وہ پرتگال کا تھا۔ اسے فائرنگ کے واقعے سے تین گھنٹے پہلے اپ لوڈ کیا گیا تھا۔ پولیس افسر نے بتایا کہ انمول کے نام پر فیس بک اکاؤنٹ غیر ملکی موبائل نمبر کا استعمال کرتے ہوئے بنایا گیا تھا۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.