National

کسان تحریک: شمبھو بارڈر پر ’ورلڈ ٹریڈ آرگنائزیشن‘ کا پُتلا نذرِ آتش، 70 ہزار گاؤں میں ’اَرتھی دَہن‘ کا انعقاد!

52views

پنجاب و ہریانہ کی سرحدوں پر کسانوں کی ’دہلی چلو‘ تحریک چند دنوں کے لیے ملتوی ضروری ہوئی ہے، لیکن مظاہرے جاری ہیں۔ پیر کے روز کسان تنظیموں نے شمبھو اور کھنوری بارڈرس پر ورلڈ ٹریڈ آرگنائزیشن (ڈبلیو ٹی او) کا پُتلا نذرِ آتش کیا۔ ڈبلیو ٹی او کا یہ پُتلا تقریباً 20 فُٹ اونچا تھا۔ جب یہ نذرِ آتش کیا گیا تو وہاں بڑی تعداد میں بچے اور خواتین بھی موجود تھے۔ بڑی تعداد میں کسان مظاہرین نے اس موقع پر آتش بازی بھی کی اور مرکزی و ہریانہ حکومت کے خلاف فلک شگاف نعرے بلند کیے۔

بچوں کے ساتھ حج پر جانے والے والدین کے لیے سعودی حکومت نے جاری کی گائیڈلائنس

میڈیا رپورٹس کے مطابق ڈبلیو ٹی او کا پُتلا نذر آتش کیے جانے کے بعد شمبھو بارڈر سے راج پورہ تک کسانوں نے ٹریکٹر مارچ نکالا۔ اس موقع پر سرون سنگھ پندھیر نے جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ ملک کی 13 ریاستوں کے 70 ہزار گاؤں میں ڈبلیو ٹی او کے ’اَرتھی دَہن‘ (علامتی طور پر جسد خاکی جلانے) کا پروگرام منعقد کیا گیا ہے۔ کسانوں نے کھنوری اور شمبھو بارڈر پر بھی ’اَرتھی دَہن‘ کیا۔ اس طرح ملک کی ہر گلی اور محلے میں کسان تحریک پہنچ چکی ہے۔

Farmers at Shambu border burn effigy of WTO and demanded that India should came out of treaty with WTO. pic.twitter.com/4DQhaFOSa6

— Praveen (@praveenpscs) February 26, 2024

سرون سنگھ پندھیر کا کہنا ہے کہ کسان تحریک ایم ایس پی گارنٹی قانون بنانے تک، ملک کے کسان-مزدوروں کا قرض ختم کرنے تک، لکھیم پور کھیری کا انصاف لینے تک، سی2-50 کے ساتھ فصلوں کی قیمت لینے تک، سبھی کیس واپس لینے تک، بجلی بل واپس لینے تک، آلودگی سے زراعت کو باہر نکالنے تک، مزدوروں کو 200 دن منریگا اور 700 روپے دِہاڑی دلوانے تک اور ڈبلیو ٹی او سے ہندوستان کے باہر آنے تک جاری رہے گی۔

جدید غزل اور مرثیہ کے منفرد لہجہ کا شاعر ’امید فاضلی‘

اس دوران کسان لیڈر سکھجیت سنگھ نے کہا کہ آج صبح ڈبلیو ٹی او کے خلاف پورے ملک کے گاؤں میں احتجاجی مظاہرے ہوئے۔ بعد ازاں شام کے وقت شمبھو اور کھنوری دونوں بارڈرس پر ڈبلیو ٹی او کا پُتلا نذرِ آتش کیا گیا۔ ڈبلیو ٹی او کے خلاف یہ احتجاجی مظاہرہ ظاہر کرتا ہے کہ ہم ان کی پالیسیوں سے متفق نہیں ہیں۔

Follow us on Google News