National

’مودی تم ہندو بھی نہیں ہے‘، لالو پرساد نے پٹنہ کی ’جَن وشواس مہاریلی‘ میں ایسا کیوں کہا؟

86views

آر جے ڈی کی ’جَن وشواس مہاریلی‘ میں آج لاکھوں عوام کی بھیڑ دیکھنے کو ملی جو کانگریس صدر کھڑگے، کانگریس رکن پارلیمنٹ راہل گاندھی، سماجوادی پارٹی صدر اکھلیش یادو اور بہار کے سابق نائب وزیر اعلیٰ تیجسوی یادو جیسے لیڈران کی تقریر پر خوب تالیاں بجاتے نظر آئے۔ اس درمیان آر جے ڈی چیف لالو پرساد کو بھی خوب تالیاں ملیں جب وہ اپنے پرانے انداز میں پی ایم نریندر مودی اور وزیر اعلیٰ نتیش کمار پر حملہ کرتے نظر آئے۔ پی ایم مودی کو تو لالو پرساد نے ’ہندو‘ ماننے سے بھی انکار کر دیا۔

परिवारवाद पर हमले वही करते हैं जिनका परिवार नहीं होता हैं नरेंद्र मोदी हिन्दू नहीं हैं ~ लालू प्रसाद यादव

जन विश्वास महारैली पटना #Bihar #laluprasadyadav@RJDforIndia @laluprasadrjd pic.twitter.com/o3p2miS87E

— Yadavendra (@yadavendra88) March 3, 2024

’جَن وشواس مہاریلی‘ سے خطاب کرتے ہوئے لالو پرساد نے کہا کہ ’’مودی کیا ہے، کیا چیز ہے؟ مودی کنبہ پروری پر بولتے ہیں، یہ بتاؤ مودی جی آپ کو اولاد کیوں نہیں ہوئی؟ تمھارے پاس فیملی ہے ہی نہیں۔‘‘ پھر وہ کہتے ہیں ’’مودی تم ہندو بھی نہیں ہے۔ کسی کی ماں مرتی ہے تو بیٹا اپنا بال چھلواتا ہے۔ جب تمھاری ماں کا انتقال ہوا تو تم (بال) کیوں نہیں چھلوائے؟‘‘ لالو پرساد کے اس بیان پر پورا مجمع تالیاں بجانے لگا اور اسٹیج پر بیٹھے لیڈران بھی مسکراتے دکھائی دیے۔ لالو یادو نے مودی حکومت پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ ’’مودی کہے تھے میری حکومت بنی تو سب کے اکاؤنٹ میں 15 لاکھ آئے گا۔ ہم بھی یقین کر لیے کہ ہو سکتا ہے آئے گا۔ سب کا اکاؤنٹ جَن دھن یوجنا کے تحت کھلا، لیکن 15 لاکھ نہیں آیا۔ سب کو مودی نے ٹھینگا دکھا دیا۔ اب سبھی اپوزیشن پارٹیاں مل کر لوک سبھا انتخاب لڑیں گے اور مودی کو وداع کریں گے۔ دہلی پر ہم لوگوں کو قبضہ کرنا ہے۔‘‘

Jan Vishwas Maha Rally: बिहार के गांधी मैदान में राजद प्रमुख लालू प्रसाद यादव का बड़ा बयान. बोले- “बिहार की हवा में इतना दम है कि जो बिहार फैसला लेता है, वहीं देश के लोग अनुकरण करते है”#LaluYadav #laluprasadyadav #Patna #BiharPolitics #JanVishwasRally #INDIAAlliancepic.twitter.com/ajko5TQPIj

— Vistaar News (@VistaarNews) March 3, 2024

آج پٹنہ کے تاریخی گاندھی میدان میں جمع بھیڑ لالو پرساد کی تقریر سننے کے لیے بے تاب دکھائی دے رہی تھی۔ جب لالو پرساد نے بولنا شروع کیا تو مجمع انھیں بغور سن رہا تھا۔ لالو نے کہا کہ ’’تیجسوی جب جَن وشواس یاترا پر تھے اور پورے بہار کا دورہ کر رہے تھے تب آپ لوگوں سے کہہ رہے تھے کہ ریلی میں آئیے گا، پاپا نے بلایا ہے۔ لاکھوں کی تعداد میں آپ لوگ آئے ہیں، سبھی کا شکریہ۔‘‘

पटना को हुमच दिया सब!

जन समुद्र था जन समुद्र। #जनविश्वास_महारैली pic.twitter.com/xE3YXPZrHB

— Lalu Prasad Yadav (@laluprasadrjd) March 3, 2024

اپنی تقریر کے دوران لالو پرساد نے وزیر اعلیٰ نتیش کمار کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا۔ انھوں نے کہا کہ ’’تیجسوی نے مہاگٹھ بندھن حکومت کے دوران لاکھوں روزگار دیا۔ ہم روز پوچھتے تھے کہ آج کتنا روزگار دیا؟ تیجسوی اچھا کام کیا ہے۔ 2017 میں جب نتیش مہاگٹھ بندھن سے این ڈی اے میں گئے تھے تو نتیش کو ہم گالی نہیں دیے۔ ہم کہے تھے پلٹو رام ہے۔ اس کے بعد ہم ان کو پھر مہاگٹھ بندھن میں دوبارہ لیے۔ لیکن ہم لوگ سے غلطی ہوئی۔‘‘ وہ آگے کہتے ہیں ’’آج کی ریلی کی بھیڑ دیکھ کر نتیش کو پتہ نہیں کون کون سی بیماری ہو جائے گی۔‘‘

Follow us on Google News