National

بھارت کی کچھ رشتہ ایپس گوگل پلے اسٹور سے ہٹا دی گئیں

79views

گوگل کی جانب سے یہ اقدام سروس فیس سے متعلق ایک تنازعے کے بعد سامنے آیا ہے۔ معروف تکنیکی کمپنی گوگل نے سروس فیس سے متعلق ایک تنازعے کے تناظر میں جمعہ کے روز اپنے پلے اسٹور سے شادی کے لیے رشتہ ڈھونڈنے والی ایپس سمیت 10 بھارتی کمپنیوں کی اپلیکشنز کو ہٹانے کا عمل شروع کر دیا۔

‘میٹریمنی ڈاٹ کام’ نامی کمپنی کے بانی مروگول جناکرامن نے اس پیش رفت کی تصدیق کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا کہ ان کی کمپنی کی ایپس ‘بھارت میٹریمنی’، ‘کرسچن میٹریمی’، ‘مسلم میٹریمنی’ اور ‘جوڑی’ کو پلے اسٹور سے ہٹا دیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا، “ہماری ایپس ایک کے بعد ایک ڈیلیٹ ہو رہی ہیں۔”

انہوں نے گوگل کے اس اقدام کے حوالے سے مزید کہا کہ آج “بھارتی انٹرنیٹ کے لیے ایک سیاہ دن ہے”۔ اس اقدام سے قبل گوگل نے ایک بلاگ پوسٹ میں کسی کمپنی کا نام لیے بغیر کہا تھا کہ 10 بھارتی کمپنیوں کی جانب سے اسے کی جانے والی ادائیگیاں ایک لمبے عرصے سے التوا کا شکار ہیں۔

دوسری بھارتی کمپنیاں اب تک اس کوشش میں تھیں کہ کسی طرح گوگل کو انڈیا میں ‘ان ایپ پیمنٹس’ پر 11 سے 26 فیصد فیس سروس عائد کرنے سے روکا جائے۔ حالانکہ رواں سال جنوری اور فروری کے مہینوں میں سپریم کورٹ سمیت دو بھارتی عدالتوں کے فیصلوں کی روشنی میں گلوگل کے پاس اب یہ فیس عائد کرنے اور بصورت دیگر ایپس کو پلے اسٹور سے ہٹانے کا اختیار ہے۔

گوگل نے پلے اسٹور کے قواعد و ضوابط کی خلاف ورزیوں کے حوالے سے میٹریمنی ڈاٹ کام اور ‘جیون ساتھی’ نامی ایپ چلانے والی بھارتی کمپنی ‘انفو ایج’ کو نوٹسز بھی بھیجے تھے، جس کے بعد ان دونوں کمپنیوں نے خبر رساں ادارے روئٹرز کو بتایا تھا کہ وہ اب اپنے اگلے اقدام کے بارے میں سوچ رہی ہیں۔ اس بارے میں انفو ایج کے بانی سنجیو بکچندانی کا کہنا تھا انہوں نے گوگل کو تمام ادائیگیاں بروقت کر دی ہیں اور انہوں نے اس کی کسی پالیسی کی خلاف ورزی نہیں کی ہے۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.