National

منی پور: مرکزی حکومت سے ریاست میں این آر سی نافذ کرنے کی اپیل، اسمبلی میں قرارداد پاس

38views

منی پور اسمبلی نے ایک قرارداد پاس کر ایک بار پھر مرکزی حکومت سے ریاست میں این آر سی نافذ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ ریاستی اسمبلی نے 2022 میں بھی اس طرح کا قرارداد پاس کیا تھا۔ اس تعلق سے ریاستی حکومت کا کہنا ہے کہ پہاڑی علاقے میں بے تحاشہ آبادی بڑھ رہی ہے اور وادیوں کی آبادی بھی تیزی سے بڑھ رہی ہے، اس لیے ریاست میں این آر سی کو نافذ کرنا ضروری ہے۔

گجرات: خودکشی کی بڑھتی تعداد پر کھڑگے کا اظہارِ فکر، کہا ’یہ اعداد و شمار بی جے پی حکومت کی ناکامی ظاہر کر رہے‘

قابل ذکر ہے کہ منی پور حکومت نے 2022 کے اپنے قرارداد میں دعویٰ کیا تھا کہ ریاست میں 1971 اور 2001 کے درمیان آبادی میں اضافہ کی شرح 153 فیصد سے زیادہ رہی تھی، جبکہ 2001 سے 2011 کے درمیان شرح اضافہ تقریباً 251 فیصد رہی تھی۔ جنتا دل یو کے رکن اسمبلی کے ایچ جوئے کشن کے گزشتہ قرارداد کے مطابق وادیوں میں 2001-1971 کے درمیان آبادی میں اضافہ کی شرح تقریباً 95 فیصد اور 2011-2001 کے درمیان 125 فیصد درج کی گئی۔

دارالعلوم دیوبند میں باشندگان دیوبند کے ساتھ زیادتیوں کا سلسلہ دراز، سنجیدہ افراد کے وفد کی مجلس شوریٰ سے ملاقات

بہرحال، منی پور اسمبلی میں این آر سی سے متعلق قرارداد پاس ہونے کی جانکاری وزیر اعلیٰ این بیرین سنگھ نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ’ایکس‘ پر بھی دی ہے۔ انھوں نے اپنے پوسٹ میں لکھا ہے کہ ’’آج منی پور اسمبلی نے 5 اگست 2022 کو پاس ہمارے قرارداد کی تصدیق کر کے ایک اہم قدم اٹھایا ہے۔ ہمیں پورا بھروسہ ہے کہ منی پور میں این آر سی نافذ کرنا ریاست کے مفادات کی حفاظت کرنے وار ملک کے لیے ضروری ہے۔‘‘

’ذات اور مذہب کے نام پر ووٹ نہ مانگیں‘، لوک سبھا انتخاب سے قبل انتخابی کمیشن کی سبھی پارٹیوں کو ہدایت

این بیرین سنگھ نے اپنے پوسٹ میں یہ بھی لکھ اہے کہ حکومت ہند سے این آر سی نافذ کرنے کی سمت میں تیزی کی گزارش منی پور کی حفاظت اور سالمیت یقینی بنانے کے لیے ہمارے عزائم کو ظاہر کرتی ہے۔ میں سبھی شہریوں سے اس کوشش کی حمایت کرنے کی گزارش کرتا ہوں۔ ہم آنے والی نسلوں کے لیے ایک مضبوط، زیادہ خوشحال منی پور بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

Follow us on Google News