National

ہندوستان-امریکہ کی شراکت داری پوری دنیا کے لیے صحیح معنوں میں ایک طاقت ہے: پی ایم مودی

107views

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعہ کے روز کہا کہ ‘ٹو پلس ٹو’ وزارتی ڈائیلاگ کے اختتام کے بعد امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن اور وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے مشترکہ طور پر ان سے ملاقات کی اور کہا کہ ہندوستان-امریکہ شراکت داری حقیقت میں پوری دنیا کی بہبود کے لیے ایک طاقت ہے۔ خیال رہے کہ بلنکن اور آسٹن نے جمعہ کو پی ایم مودی سے ملاقات کی اور انہیں ‘ٹو پلس ٹو’ فارمیٹ میں اپنی بات چیت کے بارے میں بتایا۔

پی ایم مودی نے اپنے ایکس اکاؤنٹ پر پوسٹ کیا، ’’امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن اور وزیر دفاع لائیڈ آسٹن کا استقبال کرتے ہوئے خوشی ہوئی۔ ‘ٹو پلس ٹو’ فارمیٹ ہندوستان-امریکہ جامع عالمی اسٹریٹجک پارٹنرشپ کو مزید مضبوط کرنے کے لیے ایک اہم معاون ہے۔ ہندوستان اور امریکہ کے درمیان جامع عالمی تزویراتی شراکت داری جمہوریت، تکثیریت اور قانون کی حکمرانی کے احترام پر مبنی ہے۔ ہندوستان-امریکہ کی شراکت داری واقعی پوری دنیا کے لیے اچھائی کی طاقت ہے۔

حکومت نے ایک بیان میں کہا، ’’بلنکن اور آسٹن نے وزیر اعظم کو وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ اور وزیر خارجہ ایس جے شنکر کے ساتھ ‘ٹو پلس ٹو’ فارمیٹ میں اپنی بات چیت کے بارے میں آگاہ کیا۔‘‘ وزیر اعظم نریندر مودی نے تمام شعبوں میں بڑھتے ہوئے تعاون پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ ہندوستان اور امریکہ کے درمیان جامع عالمی اسٹریٹجک شراکت داری جمہوریت، تکثیریت اور قانون کی حکمرانی کے احترام پر مبنی ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ انہوں نے مغربی ایشیا میں جاری پیش رفت سمیت باہمی دلچسپی کے مختلف علاقائی اور عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے ان مسائل پر ہندوستان اور امریکہ کے درمیان مسلسل قریبی تال میل کی ضرورت پر زور دیا۔

پی ایم مودی نے امریکی صدر جو بائیڈن کو بھی نیک خواہشات کا اظہار کیا اور کہا کہ وہ ان کے ساتھ مسلسل تبادلے کے منتظر ہیں۔ ‘ٹو پلس ٹو’ ڈائیلاگ میں راج ناتھ سنگھ، ایس جے شنکر، آسٹن اور بلنکن نے ہندوستان-امریکہ عالمی اسٹریٹجک شراکت داری کو آگے بڑھانے کے لیے وسیع پیمانے پر بات چیت کی۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.