National

بی جے پی اقتدار میں آئی تو آئین اور جمہوریت کو ختم کر دے گی، آگے الیکشن نہیں ہوں گے! ملکارجن کھڑگے

68views

کانگریس صدر ملکارجن کھڑگے نے کہا کہ اگر بی جے پی غلطی سے دوبارہ اقتدار میں آتی ہے تو وہ ملک سے آئین اور جمہوریت کو تباہ کر دے گی اور مزید انتخابات نہیں ہوں گے۔ لوک سبھا انتخابات کے لیے پارٹی کے امیدوار وکاس ٹھاکرے کی حمایت میں مہاراشٹر کے ناگپور میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کانگریس صدر ملکارجن کھڑگے نے کہا، ’’کانگریس کی لڑائی منو وادی نظریہ کے خلاف ہے۔ بابا صاحب ڈاکٹر بھیم رام امبیڈکر کہتے تھے کہ تعلیم یافتہ بنو، منظم رہو اور جدوجہد کرو۔ صرف ہندوستانی آئین ہی اس منتر کو آگے بڑھا سکتا ہے۔ کانگریس اس آئین کو بچانے کی جنگ لڑ رہی ہے۔ کانگریس کی لڑائی مودی اور بی جے پی سے نہیں بلکہ اس ملک کے آئین کو بچانے اور جمہوریت کو برقرار رکھنے کی ہے۔ کانگریس چاہتی ہے کہ سب کو یکساں مواقع ملیں اور سب متحد رہیں۔‘‘

کانگریس صدر نے کہا کہ کانگریس نے ملک کی آزادی کے لیے جنگ لڑی اور قربانیاں دیں۔ دوسری طرف آر ایس ایس نے آزادی کی جدوجہد میں حصہ نہیں لیا۔ آر ایس ایس کے لوگ انگریزوں کے لیے کام کرتے تھے۔ آر ایس ایس کے دفتر میں بابا صاحب ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر کی تصویر بھی نہیں لگائی جاتی تھی، حتی کہ ترنگا جھنڈا بھی نہیں لگایا جاتا تھا۔

وزیر اعظم نریندر مودی پر جھوٹے وعدے کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کھڑگے نے کہا، ’’وزیر اعظم نریندر مودی نے ہر سال دو کروڑ نوکریاں دینے، کالا دھن واپس لا کر ہر ایک کو 15 لاکھ روپے دینے اور کسانوں کی آمدنی کو دوگنا کرنے جیسے وعدے کیے تھے۔ وزیر اعظم مودی نے کوئی وعدہ پورا نہیں کیا۔ پی ایم مودی جھوٹ بولتے ہیں۔ مودی نے اپنی کوئی گارنٹی پوری نہیں کی، وہ صرف اپنے بیانات سے عوام کو دھوکہ دیتے رہے لیکن اب عوام باشعور ہو چکے ہیں اور اس ناانصافی کو شکست دینے کے لیے پرعزم ہیں۔ وہ آنے والے انتخابات میں اس بیان بازی والی حکومت کو اقتدار سے بے دخل کر دیں گے۔‘‘

کانگریس صدر نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے اس وقت کے ملک کے صدر رام ناتھ کووند کو پارلیمنٹ کا سنگ بنیاد رکھنے کا موقع نہیں دیا۔ پارلیمنٹ کے افتتاح کے موقع پر بھی صدر دروپدی مرمو کو مدعو نہیں کیا گیا تھا۔ دروپدی مرمو کو رام مندر کے افتتاح کے موقع پر بھی نہیں بلایا گیا۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے صدور، قبائلیوں اور دلتوں کی توہین کی۔

دریں اثنا، کھڑگے نے کانگریس کے منشور میں کئے گئے وعدوں کو دہرایا اور کہا کہ مرکز میں کانگریس کی حکومت بننے پر تمام وعدے پورے کئے جائیں گے۔ انہوں نے عوام سے مطالبہ کیا کہ وہ کانگریس کے امیدوار کو بھاری اکثریت سے جیت کر انڈیا اتحاد کی حکومت بنائیں۔ اس دوران ریاستی کانگریس کے صدر نانا پٹولے، بالا صاحب تھورات، مانیک راؤ ٹھاکرے، چندرکانت ہنڈورے اور دیگر سینئر لیڈران موجود تھے۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.