National

مختار انصاری کی موت کے بعد اکھلیش یادو یوگی حکومت پر ناراض، کہا- ’انہیں اقتدار میں رہنے کا کوئی حق نہیں‘

55views

مختار انصاری کی موت کے بعد یوگی حکومت پر ہر جانب سے تنقیدیں شروع ہو گئیں ہیں۔ کانگریس و بی ایس پی کی جانب سے اس کی اعلیٰ سطحی انکوائری کے مطالبے کے بعد سماج وادی پارٹی کا بھی اس پر سخت ردعمل سامنے آیا ہے۔ ایس پی کے قومی صدر اور یوپی کے سابق وزیر اعلیٰ اکھلیش یادو نے مختار انصاری کی موت پر یوگی حکومت پر سخت ناراضگی ظاہر کی ہے اور کہا ہے کہ انہیں اقتدار میں رہنے کا کوئی حق نہیں ہے۔

اکھلیش یادو نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ’ایکس‘ پر ایک پوسٹ لکھا ہے جس میں کہا ہے کہ ’’ہر حال میں اور ہر جگہ کسی کی زندگی کی حفاظت کرنا حکومت کا اولین فرض ہوتا ہے۔ حکومتوں پر مندجہ ذیل حالات میں سے کسی بھی حالت میں، کسی محروس یا قیدی کی موت ہونا ، عدالتی عمل سے لوگوں کا یقین اٹھا دے گا۔

اکھلیش یادو نے اپنی پوسٹ میں کئی وجوہات درج کی ہیں۔ انہوں نے لکھا ہے ’’تھانے میں حراست میں رہتے ہوئے، جیل کے اندر آپسی لڑائی میں، جیل کے اندر بیمار ہونے پر، عدالت لے جاتے وقت، اسپتال لے جاتے وقت، اسپتال میں علاج کے دوران، جھوٹا انکاؤنٹر دکھا کر، جھوٹی خودکشی دکھا کر، کسی حادثے میں زخمی دکھا کر۔ ایسے تمام مشتبہ معاملات میں سپریم کورٹ کے جج کی نگرانی میں جانچ ہونی چاہئے۔ حکومت عدالتی عمل کو بالاطاق رکھ کر جس طرح دوسرے راستے اپناتی ہے وہ پوری طرح غیر قانونی ہے۔

ایس پی سربراہ نے کہا کہ ’’جو حکومت زندگی کی حفاظت نہ کر پائے اسے اقتدار میں بر قرار رہنے کا کوئی  حق نہیں۔ اتر پردیش ’سرکاری انارکی‘ کے بدترین دور سے گزر رہا ہے۔ یہ یوپی میں لاء اینڈ آرڈر کا ‘صفر دور’ (شونیہ کال) ہے۔‘‘

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.