National

’ہم ساتھ مل کر جمہوریت اور آئین کی حفاظت کریں گے‘، قنوج میں راہل-اکھلیش کا اظہارِ عزم

54views

قنوج: کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی آج قنوج لوک سبھا سیٹ سے سماجوادی پارٹی امیدوار اکھلیش یادو کی حمایت میں انتخابی تشہیر کرتے ہوئے دکھائی دیے۔ قنوج میں منعقد ایک جلسۂ عام کے دوران راہل گاندھی اور اکھلیش یادو دونوں ایک پلیٹ فارم پر دکھائی دیے اور مرکز میں انڈیا اتحاد کی حکومت بنانے کا عزم ظاہر کیا۔ اس موقع پر راہل گاندھی نے کہا کہ ’’ہم ساتھ مل کر جمہوریت اور آئین کی حفاظت کریں گے۔ دنیا کی کوئی طاقت ہندوستانی آئین کو ختم نہیں کر سکتی۔‘‘

हम साथ मिलकर लोकतंत्र और संविधान की रक्षा करेंगे।

दुनिया की कोई ताकत हिंदुस्तान के संविधान को खत्म नहीं कर सकती।

जीतेगा INDIA

कन्नौज, उत्तर प्रदेश pic.twitter.com/7g5Sr21Qu3

— Congress (@INCIndia) May 10, 2024

راہل گاندھی نے کورونا لاک ڈاؤن کا دور یاد کرتے ہوئے کہا کہ ’’جس کمپنی نے کووڈ کی ویکسین بنائی، اس کمپنی سے نریندر مودی نے کروڑوں روپے کا چندہ لیا۔ آپ (عوام) آکسیجن، ونٹلیٹر کی کمی کے سبب مر رہے تھے، لیکن نریندر مودی آپ سے کہہ رہے تھے– تھالی بجاؤ۔ کمپنی سے کہہ رہے تھے– ہمیں پیسہ دو۔‘‘

जिस कंपनी ने कोविड की वैक्सीन बनाई, उस कंपनी से नरेंद्र मोदी ने करोड़ों रुपए का चंदा लिया।

आप ऑक्सीजन, वेंटिलेटर की कमी के कारण मर रहे थे।

लेकिन..
नरेंद्र मोदी आपसे कह रहे थे- थाली बजाओ।
कंपनी से कह रहे थे- हमें पैसा दो।

: @RahulGandhi जी

कन्नौज, उत्तर प्रदेश pic.twitter.com/cbVWRewLeq

— Congress (@INCIndia) May 10, 2024

اپنی تقریر کے دوران راہل گاندھی نے دعویٰ کیا کہ اس مرتبہ نریندر مودی ہندوستان کے وزیر اعظم نہیں بننے والے۔ ساتھ ہی انھوں نے کہا کہ لوک سبھا انتخاب میں انڈیا اتحاد کی جیت ہوگی۔ اتر پردیش میں انڈیا اتحاد کا طوفان آ رہا ہے۔ بی جے پی کی ملک میں سب سے بڑی شکست اتر پردیش میں ہونے جا رہی ہے، کیونکہ ملک کو اتر پردیش راستہ دکھاتا ہے اور اتر پردیش نے بدلاؤ کا ذہن تیار کر لیا ہے۔

Follow us on Google News