International

اسرائیل میں 3 ہندوستانی میزائل حملے کا نشانہ بنے، ایک کی موت

36views

حماس کے ساتھ جاری جنگ کے درمیان لبنان سے اسرائیل پر داغے گئے ٹینک شکن میزائل حملے میں ایک ہندوستانی شہری ہلاک اور دو دیگر  زخمی ہوگئے ہیں۔ یہ حملہ اسرائیل کی شمالی سرحد کے قریب کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق یہ تینوں ہندوستانی کیرالہ کے رہائشی ہیں۔ یہ میزائل حملہ پیر کی صبح تقریباً 11 بجے اسرائیل کے علاقے گلیلی میں ہوا۔ بتایا جا رہا ہے کہ یہ میزائل ایک کھیت میں گرا، جہاں کام کرنے والے لوگ اس کی زد میں آ گئے۔ اس حملے میں ہلاک ہونے والے ہندوستانی شہری کی شناخت پیٹنی میکسویل کے طور پر ہوئی ہے جو کیرالہ کے کولم کا رہنے والا ہے۔ زخمیوں کی شناخت بش جوزف جارج اور پال میلون کے نام سے ہوئی ہے۔

گینگسٹر کالا جٹھیڑی کو انورادھا چودھری سے چھہ گھنٹےمیں شادی کرنی ہوگی

ایک سرکاری ذریعے نے بتایا کہ جارج کو میزائل حملے میں جھلسنے کی وجہ سے قریبی بیلنسن اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ اس کا چہرہ جل گیا ہے۔ اس کا آپریشن ہو رہا ہے لیکن وہ صحت یاب ہو رہا ہے۔ اسے زیر نگرانی رکھا گیا ہے۔ وہ ہندوستان میں اپنے خاندان سے بات کر سکتا ہے۔ اس دوران میلون کو معمولی چوٹیں آئی ہیں اور اسے شمالی اسرائیل کے زیو ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ خیال کیا جاتا ہے کہ یہ حملہ لبنان کی حزب اللہ نے کیا ہے۔ یہ 8 اکتوبر سے اسرائیل پر مسلسل راکٹ، میزائل اور ڈرون حملے کر رہا ہے۔

اسرائیل میں ایک ہندوستانی کی موت پر تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے، اسرائیل میں ہندوستانی سفارت خانے نے ایک بیان جاری کیا  ہےجس میں کہا گیا ہے کہ ہم حزب اللہ کے بزدلانہ دہشت گردانہ حملے میں ایک ہندوستانی شہری کی موت کی شدید مذمت کرتے ہیں، جو صرف ایک کھیت میں کام کر رہا تھا۔ ہماری دعائیں اور تعزیت متاثرین اور زخمیوں کے اہل خانہ کے ساتھ ہیں۔ اسرائیلی طبی ادارے زخمیوں کو بہترین علاج فراہم کر رہے ہیں۔ اسرائیل دہشت گردی کے واقعات میں مارے جانے والے ہر شہری کے ساتھ یکساں سلوک کرتا ہے، چاہے وہ ہندوستانی ہو یا کسی اور ملک کا۔

اسرائیل اور حماس کے درمیان گزشتہ سال 7 اکتوبر سے جنگ جاری ہے۔ حماس نے اسرائیل پر پانچ ہزار سے زائد راکٹ فائر کیے تھے۔ اس کے بعد اسرائیل نے اعلان جنگ کر دیا تھا۔ اسرائیل اور حماس کے درمیان جاری جنگ میں اب تک ہزاروں افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

Follow us on Google News