International

100 ڈالر کا نوٹ امریکا میں پریشانی کا باعث کیوں بن گیا؟

111views

کیا آپ جانتے ہیں کہ امریکہ میں کون سے کرنسی نوٹ سب سے زیادہ استعمال ہوتے ہیں؟ تو جواب ہے 100 ڈالر۔ امریکہ میں 100 ڈالر کا نوٹ سب سے زیادہ استعمال ہوتا ہے لیکن اس نوٹ سے ہر کوئی پریشان ہے ۔

نیوز پورٹل ’آج تک‘ پر شائع رپورٹ کے مطابق امریکی اخبار وال اسٹریٹ جرنل نے ایک رپورٹ شائع کی ہے جس  کے مطابق امریکہ میں 100 ڈالر کا نوٹ بہت عام ہے۔ اور یہی وجہ ہے کہ اب لوگ اس سے پریشان ہونے لگے ہیں۔

وال اسٹریٹ جرنل نے رپورٹ میں لکھا  ہے کہ $100 کا نوٹ اتنا عام ہے کہ یہ $1 کے نوٹ کو بھی بونا کر دیتا ہے۔ فیڈرل ریزرو کے اعداد و شمار کے مطابق، 2012 اور 2022 کے درمیان $100 کے نوٹوں کی گردش دگنی سے بھی زیادہ ہو گئی ہے۔ اعداد و شمار کے مطابق 2012 میں 8.6 بلین ڈالر کے 100 نوٹ گردش میں تھے۔ 2022 میں ان کی تعداد بڑھ کر 18.5 بلین ہو گئی۔

اس سب کے باوجود، 100 ڈالر کا نوٹ خرچ کرنا اتنا ہی مشکل ہے۔ اس کی بھی ایک وجہ ہے۔ اور وہ یہ کہ زیادہ تر دکاندار 100 ڈالر کا نوٹ لینے سے انکار کر دیتے ہیں ۔ ایک اور وجہ جعلی نوٹوں کی بڑھتی ہوئی گردش ہے۔ یہ اس قدر عام ہو گیا ہے کہ 100 ڈالر کے جعلی نوٹ اندھا دھند بازار میں آ رہے ہیں۔ دکاندار ان نوٹوں کو قبول کرنے سے پہلے کئی بار چیک کرتے ہیں۔ اب صورتحال ایسی ہے کہ ماہرین اقتصادیات نے 100 ڈالر کے نوٹوں کی چھپائی کم کرنے کی اپیل کی ہے۔

کووڈ وبائی مرض کے بعد نقدی کے رجحان میں قدرے کمی آئی ہے۔ اعداد و شمار کے مطابق، امریکہ میں 60 فیصد سے زیادہ ادائیگیاں ڈیبٹ یا کریڈٹ کارڈز کے ذریعے کی جاتی ہیں اور نقد ادائیگی اب بھی تیسرا سب سے بڑا ذریعہ ہے۔

ہارورڈ یونیورسٹی کے ماہر معاشیات کینتھ روگف کا خیال ہے کہ $100 کے نصف سے زیادہ نوٹ اب بھی بیرون ملک رکھے ہوئے ہیں۔ اس کے باوجود، ہر امریکی کے پاس اوسطاً 55 امریکی 100 ڈالر کے نوٹ ہیں۔

معاشی ماہرین کا خیال ہے کہ 100 ڈالر کا نوٹ 1 ڈالر یا 5 ڈالر کے نوٹ کے مقابلے میں زیادہ دیر تک زیر گردش رہتا ہے کیونکہ لوگ اسے خرچ کرنے کے بجائے اپنے پاس رکھنا پسند کرتے ہیں۔ لوگ 100 ڈالر کے نوٹ کو بھی ‘اسٹیٹس سمبل’ سمجھتے ہیں۔

فیڈرل ریزرو کے اعداد و شمار کے مطابق، لوگ چھوٹی خریداریوں کے لیے نقد زیادہ استعمال کرتے ہیں۔ صارفین نے نقد رقم سے ادائیگی کرتے وقت اوسطاً39 ڈالرخرچ کیے، جبکہ کریڈٹ کارڈ کے ذریعے اوسطاً95 ڈالرخرچ کیے گئے۔

اقتصادی ماہرین کا یہ بھی ماننا ہے کہ 100 ڈالر کا نوٹ لوگوں کو کم خرچ کرنے پر مجبور کرتا ہے۔ تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ اگر کسی کے پاس 20 ڈالر کے پانچ نوٹ ہیں تو وہ زیادہ خرچ کرتا ہے۔ لیکن اگر اسی شخص کے پاس ڈالر 100 کا نوٹ ہے تو وہ بہت زیادہ خرچ کرنے سے گریز کرتا ہے۔ ان سب کے علاوہ اے ٹی ایم میں 100 ڈالر کے نوٹ بھی زیادہ بھرے ہوئے ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ اے ٹی ایم میں 100 ڈالر کا نوٹ لوڈ کرنا 20 ڈالر کے نوٹ سے پانچ گنا کم کام ہے۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.