Jharkhand

ملک میں ہر طرف ’بی جے پی، ہماری ماٹی چھوڑو‘ کی آواز بلند ہو رہی: ملکارجن کھڑگے

307views

دیوگھر: ’’آج ملک میں ہر طرف ’بی جے پی، ہماری ماٹی چھوڑو‘ کی آواز بلند ہو رہی ہے۔ گزشتہ دس سالوں میں پی ایم مودی نے قبائلیوں، دلتوں، پسماندہ طبقات، غریبوں کی ہر قدم پر بے عزتی کی ہے۔‘‘ یہ بیان کانگریس صدر ملکارجن کھڑگے نے آج جھارکھنڈ کے دیوگھر میں گوڈا لوک سبھا سیٹ سے کانگریس امیدوار پردیپ یادو کی حمایت میں عظیم الشان جلسۂ عام سے خطاب کرتے ہوئے دیا۔ اس انتخابی جلسہ میں جھارکھنڈ کے وزیر اعلیٰ چمپئی سورین، بہار کے سابق نائب وزیر اعلیٰ تیجسوی یادو، جھارکھنڈ کانگریس انچارج غلام احمد میر، جھارکھنڈ کانگریس صدر راجیش ٹھاکر سمیت انڈیا اتحاد کے کئی سینئر لیڈران موجود تھے۔

लोकतंत्र और संविधान ने हमें सम्मान और स्वाभिमान से जीने का अधिकार दिया है।

हम हर कीमत पर इसकी रक्षा करेंगे।

देवघर, झारखंड pic.twitter.com/0TqW7Ni0gD

— Congress (@INCIndia) May 24, 2024

اس موقع پر کانگریس صدر کھڑگے نے کہا کہ ’’ہندوستان میں ایک ہی قبائلی وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین تھے۔ انتخاب کے وقت انھیں جیل میں ڈال دیا گیا۔ اس کا بدلہ جھارکھنڈ کی عوام ضرور لے گی۔‘‘ انھوں نے مزید کہا کہ ’’رام مندر کی پران پرتشٹھا کے وقت صدر جمہوریہ دروپدی مرمو کو مدعو نہیں کیا گیا کیونکہ وہ قبائلی ہیں۔ پارلیمنٹ ہاؤس کے سنگ بنیاد کے وقت رام ناتھ کووند کو بھی نہیں بلایا گیا۔ یہ دلتوں سے مودی حکومت کے نفرت کو ظاہر کرتا ہے۔‘‘

لوگوں کی زبردست بھیڑ سے خطاب کرتے ہوئے کھڑگے نے کہا کہ گزشتہ دس سالوں میں وزیر اعظم مودی نے ملک کا جل-جنگل-زمین اپنے بیس پچیس قریبی دوستوں کو دے دیا۔ وہ ملک کی ملکیت اور بڑے بڑے پبلک سیکٹرس ایک ایک کر فروخت کر رہے ہیں۔ مودی کہتے ہیں کہ کانگریس نے 55 سالوں میں کیا کیا! کانگریس تو اپنا حساب دے رہی ہے، لیکن پی ایم مودی اپنے دس سالوں کا حساب دیں کہ انھوں نے ملک کے لیے کیا کیا ہے؟ کانگریس نے جو کچھ بنایا، پی ایم مودی اسے فروخت کر رہے ہیں، غریب عوام کو لوٹا جا رہا ہے۔

UPA सरकार में वन अधिकार कानून बना था, जिसे मोदी सरकार ने कमजोर करने का काम किया।

राहुल गांधी जी ने सरना कोड को भी लागू करने का आश्वासन दिया है।

हमारी सरकार आएगी, हम यह काम करेंगे।

: कांग्रेस अध्यक्ष श्री @kharge

देवघर, झारखंड pic.twitter.com/zkKa3iDCgH

— Congress (@INCIndia) May 24, 2024

اپنی بات کو آگے بڑھاتے ہوئے کھڑگے نے کہا کہ یو پی اے حکومت میں فوریسٹ رائٹس ایکٹ بنا تھا۔ اسے مودی حکومت نے کمزور کیا ہے۔ جنگل کاٹنے اور کمپنیوں کو سونپنے کے لیے لازمی اتفاق کے اصول کو ختم کر کے جل (پانی)، جنگل، زمین پر حملہ کی اگیا۔ کانگریس صدر نے مزید کہا کہ پی ایم مودی ای ڈی، انکم ٹیکس محکمہ اور سی بی آئی کا غلط استعمال کر رہے ہیں۔ وہ اپوزیشن لیڈران کو پریشان کرنے کا کام کر رہے ہیں۔ لیکن کانگریس لیڈران لڑنے والے ہیں، ڈرنے والے نہیں۔ جب کانگریس برطانوی حکومت سے نہیں ڈری تو نریندر مودی سے کیا ڈرے گی۔

हम लड़ने वाले लोग हैं, डरने वाले नहीं।

जब हम ब्रिटिश सरकार से नहीं डरे, तो नरेंद्र मोदी से क्या डरेंगे।

: कांग्रेस अध्यक्ष श्री @kharge

देवघर, झारखंड pic.twitter.com/tKhVdWQRFI

— Congress (@INCIndia) May 24, 2024

کھڑگے نے اپنی تقریر کے دوران عوام سے انڈیا اتحاد کے امیدواروں کی حمایت میں ووٹ ڈالنے کی اپیل کی اور کہا کہ ایسا کر کے ہی آئین کو بچایا جا سکے گا۔ انھوں نے مزید کہا کہ مودی کو غریبی، مہنگائی، بے روزگاری اور عوام کی تکلیف کا کچھ بھی پتہ نہیں، کیونکہ وہ محل میں رہتے ہیں۔ مہنگائی اور بے روزگاری کی طرف انھوں نے کوئی توجہ نہیں دی۔ پی ایم مودی ہندو-مسلم بول کر توڑنے کی بات کرتے ہیں۔ دوسری طرف کانگریس ہے جو لوگوں کو جوڑنے کی بات کرتی ہے۔ کانگریس ملک کو متحد رکھنا چاہتی ہے۔

جھارکھنڈ کے وزیر اعلیٰ چمپئی سورین نے اس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بی جے پی پر ملک کو گمراہ کرنے کا الزام عائد کیا۔ انھوں نے کہا کہ ’’بی جے پی نے ملک کی عوام کو گمراہ کر 2014 میں اقتدار حاصل کیا۔ گزشتہ دس سالوں سے بی جے پی اقتدار میں ہے لیکن ایک بار بھی مہنگایئ اور بے روزگاری کی بات نہیں کی۔ ان دس سالوں میں بی جے پی کے وعدے جملے ثابت ہو گئے۔ ملک میں حکومت لگاتار نجکاری کر رہی ہے اور چند سرمایہ داروں کو فروغ دیا جا رہا ہے۔‘‘

BJP ने देश की जनता को गुमराह कर 2014 में सत्ता हासिल की।

बीते 10 साल से BJP सत्ता में है लेकिन एक बार भी महंगाई और बेरोजगारी की बात नहीं की।

इन 10 वर्षों में BJP के वादे जुमले साबित हो गए।

देश में सरकार लगातार निजीकरण कर रही है और चंद पूंजीपतियों को बढ़ावा दिया जा रहा है।

:… pic.twitter.com/duRTXF5nuw

— Congress (@INCIndia) May 24, 2024

اس دوران بہار کے سابق وزیر اعلیٰ تیجسوی یادو نے پی ایم مودی کو دنیا کا سب سے جھوٹا وزیر اعظم قرار دیا۔ انھوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ ’’ملک ہی نہیں دنیا کے سب سے جھوٹے وزیر اعظم کا نام نریندر مودی ہے۔ نریندر مودی جھوٹ بولنے کی فیکٹری ہیں۔‘‘ انھوں نے مزید کہا کہ ’’نریندر مودی نے بہار اور جھارکھنڈ کے ساتھ ہمیشہ سوتیلا سلوک کیا ہے۔ نریندر مودی نے کہا تھا بیرون ممالک سے بلیک منی واپس لائیں گے، سب کے اکاؤنٹ میں پندرہ پندرہ لاکھ روپےڈالیں گے، ہر سال دو کروڑ ملازمتیں دیں گے، کسانوں کی آمدنی دوگنی کریں گے، سبھی کو پختہ مکان دیں گے… لیکن نریندر مودی نے کوئی بھی وعدہ پورا نہیں کیا۔‘‘

देश ही नहीं दुनिया के सबसे झूठे प्रधानमंत्री का नाम नरेंद्र मोदी है।

नरेंद्र मोदी झूठ बोलने की फैक्ट्री हैं।

नरेंद्र मोदी ने बिहार और झारखंड के साथ हमेशा सौतेला व्यवहार किया है।

नरेंद्र मोदी ने कहा था:

– विदेशों से काला धन वापस लाएंगे
– सबके खाते में 15-15 लाख आएंगे
– हर साल… pic.twitter.com/yHWVJzGLx3

— Congress (@INCIndia) May 24, 2024

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.