National

لوک سبھا انتخاب: کانگریس نے منی پور میں 47 پولنگ مراکز پر پھر سے ووٹنگ کرانے کا کیا مطالبہ

86views

جمعہ یعنی 19 اپریل کو لوک سبھا کی 102 سیٹوں کے لیے ووٹ ڈالے گئے۔ اس دوران منی پور کی بھی 2 لوک سبھا سیٹوں پر ووٹ ڈالے گئے، لیکن تشدد کے کچھ واقعات اور ای وی ایم توڑے جانے کی خبریں بھی موصول ہوئیں۔ ووٹنگ ختم ہونے کے بعد اب کانگریس پارٹی نے الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا ہے کہ کچھ پولنگ مراکز پر دوبارہ ووٹنگ کرائی جائے۔

دراصل منی پور میں 2 لوک سبھا سیٹیں منی پور اندرونی اور منی پور باہری ہیں۔ منی پور اندرونی لوک سبھا سیٹ کے لیے مکمل طور پر 19 اپریل کو ووٹنگ ہوئی، جبکہ منی پور باہری سیٹ کے کچھ حصوں میں جمعہ کو ووٹ ڈالے گئے اور باقی حصوں پر دوسرے مرحلہ یعنی 26 اپریل کو ووٹ ڈالے جائیں گے۔ منی پور میں 19 اپریل کو ہوئی ووٹنگ کے دوران ووٹرس کو ڈرانے دھمکانے، بوتھ پر قبضہ کرنے اور کئی پولنگ مراکز پر تشدد کی شکایتوں کے درمیان تقریباً 68 فیصد پولنگ درج کی گئی۔

منی پور میں کچھ پولنگ مراکز پر ای وی ایم کے ساتھ توڑ پھوڑ کی خبروں نے وہاں سیکورٹی انتظامات پر سوالیہ نشان کھڑا کر دیا ہے۔ اس دوران کانگریس نے دھاندلی اور بوتھ پر قبضہ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے 47 پولنگ مراکز پر دوبارہ ووٹنگ کرائے جانے کا مطالبہ کیا ہے۔ کانگریس کی منی پور یونٹ کے صدر کے. میگھ چندر نے بتایا کہ پارٹی نے منی پور کے چیف الیکٹورل افسر کے پاس شکایت درج کرائی ہے۔ اس شکایت میں اندرونی منی پور انتخابی حلقہ کے 36 اور باہری منی پور انتخابی حلقہ کے 11 پولنگ مراکز پر دوبارہ ووٹنگ کرائے جانے کا مطالبہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ 60 رکنی منی پور اسمبلی کے 32 انتخابی حلقے اندرونی منی پور لوک سبھا سیٹ کے تحت آتے ہیں، جبکہ 28 اسمبلی حلقے باہری منی پور لوک سبھا سیٹ کا حصہ ہیں۔ منی پور پولیس نے میڈیا سے بات چیت کے دوران بتایا کہ پہلے مرحلہ کی پولنگ والے دن امپھال کے ایک اسکول میں گولی باری کا واقعہ پیش آیا۔ پولیس نے اس میں ملوث تین لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ اس حادثہ کے دوران ایک شخص کے زخمی ہونے کی خبر ہے۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.