National

رامپور میں پولیس فائرنگ سے دلت طالب علم کی ہلاکت پر کانگریس برہم، قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ

52views

نئی دہلی: کانگریس نے اتر پردیش کے رامپور میں دلت طالب علم سمیش کمار کے قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور اپنی برہمی کا اظہار کیا ہے۔ کانگریس نے اس قتل واقعہ کی جانچ کرانے اور قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ نئی دہلی واقع کانگریس ہیڈکوارٹر میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کانگریس لیڈر اُدت راج نے حکومت سے یہ مطالبہ کیا ہے۔

ادت راج نے پولیس فائرنگ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اتر پردیش کے رامپور واقع بڑاگاؤں میں کچھ افسران پولیس فورس و دبنگوں کے ساتھ پہنچے تھے۔ وہاں دلت طالب علم سمیش کمار کا گولی مار کر قتل کر دیا گیا اور اس فائرنگ میں دو لوگ زخمی بھی ہوئے۔ دلتوں کی غلطی یہی تھی کہ وہ گڈھے کو بھر کر بابا صاحب کا بورڈ لگانا چاہ رہے تھے۔ اتر پردیش میں اس طرح کا ظلم جاری ہے۔

ڈاکٹر اُدت راج کا کہنا ہے کہ ایس ڈی ایم کی موجودگی میں سمیش کمار کو گولی مارا جانا اسٹیٹ ٹیررزم کی مثال ہے۔ یہ اسٹیٹ ٹیررزم ڈرانے کے لیے ہے تاکہ آگے کوئی ایسی ہمت نہ کر سکے۔ بی جے پی دلت، پسماندوں، قبائلیوں کو غلام بنا کر رکھنا چاہتی ہے۔ کانگریس کا مطالبہ ہے کہ رامپور مین دلت طالب علم کے قتل معاملے کی جانچ ہو اور قصورواروں پر سخت ایکشن ہو۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر ادت راج نے کہا کہ اتر پردیش میں کئی سالوں بعد تقریباً 60 ہزار عہدوں پر پولیس کانسٹیبل کی بھرتی آئی تھی۔ اس بھرتی کا پیپر لیک کرا دیا گیا تاکہ مستقل بھرتی نہ ہو اور لوک سبھا انتخاب گزر جانے کے بعد بھرتی نہ کی جائے۔ بی جے پی حکومت سرکاری ملازمتوں کی سب سے بڑی دشمن ہے۔ جب دلت، پسماندہ، قبائلی طبقہ کے طالب علم حکومت و انتظامیہ میں آتے ہیں تو بی جے پی کو تکلیف ہوتی ہے۔ ان کی شراکت داری سے بی جے پی کو تکلیف ہوتی ہے کہ یہ نوجوان اپنے سماج کے ساتھ انصاف کریں گے، بیداری آئے گی اور ان کی آمدنی بڑھ جائے گی تو یہ غلامی نہیں کر پائیں گے۔ یہی سب اس وقت چل رہا ہے۔

Follow us on Google News
Jadeed Bharat
www.jadeedbharat.com – The site publishes reliable news from around the world to the public, the website presents timely news on politics, views, commentary, campus, business, sports, entertainment, technology and world news.