جديد بهارت

Jadeed Bharat

No. 1 Urdu Daily Newspaper of Jharkhand

E Paper


جھارکھنڈ کے امیدواروں کا نام دہلی میں طے ہوگا وزیر اعلی رگھورداس بات چیت کے لئے دہلی گئے

19 Mar 2019


جدید بھارت نیوز سروس

رانچی، 19 ؍مارچ: وزیر اعلی رگھوور داس منگل کو سروس طیارے سے نئی دہلی کے لئے روانہ ہوئے۔ رگھوور داس نئی دہلی میں پارٹی کے اعلی رہنماؤں کے ساتھ امیدواروں کے انتخاب کے مسئلے پر بات چیت کریں گے۔ وزیر اعلی رگھوور داس، ریاستی لوک سبھا انچارج منگل پانڈے اور تنظیمی جنرل سکریٹری کی جانب سے صوبائی انتخاب کمیٹی کی میٹنگ کے بعد امیدواروں کی فہرست مرکزی قیادت کو پہلے ہی سونپی جا چکی ہے۔ لیکن کچھ سیٹوں پر مشاورت کے لئے وزیر اعلی کو دہلی بلایا گیا ہے اور وزیر اعلی سے بات چیت کے بعد ہی مرکزی قیادت کی جانب سے امیدواروں کے نام کا باقاعدہ اعلان کئے جانے کا امکان ہے۔حالانکہ ابھی بھی امیدواروں کے نام کے اعلان میں کچھ وقت لگنے کا امکان ہے اور ایسا امکان ہے کہ جھارکھنڈ کے لئے پارٹی امیدواروں کے ناموں کا اعلان ہولی کے تہوار کے بعد ہی ہو سکے گا۔ بی جے پی نے ریاست کی 14 لوک سبھا سیٹوں میں سے 13 سیٹ پر اپنی قسمت آزمانے کا فیصلہ کیا ہے اور ان نشستوں کے لئے پارٹی کے پاس امیدواروں کی طویل فہرست ہے۔ سال 2014 میں بی جے پی نے 14 سیٹوں میں سے 12 سیٹوں پر کامیابی حاصل کی تھی، لیکن ان میں سے ایک نشست بی جے پی نے اپنے اتحادی آجسو کے لئے چھوڑ دی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ ہر ایک سیٹ پر 3 سے 5 امیدواروں کی دعویداری نے رانچی سے لے کر دہلی تک کے بیٹھے لیڈروں کو سوچنے پر مجبور کر دیا ہے۔ اس بار ٹکٹ تقسیم میں سماجی، سیاسی اور ذاتی مساوات کے تال میل بیٹھانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ بی جے پی انتخابی میدان میں ہر ذات اور طبقے کو اتارنے میں لگی ہے، تاکہ بی جے پی سب کا ساتھ سب کا وکاس کے نعرے کو زمین پر اتار سکے۔ سیاسی گلیاروں میں سیٹنگ ممبران پارلیمنٹ کے ٹکٹ کٹنے اور نہیں کٹنے کے درمیان بھی سماجی توازن بنانے پر خاصا خیال رکھا جا رہا ہے۔