جديد بهارت

Jadeed Bharat

No. 1 Urdu Daily Newspaper of Jharkhand

E Paper


مین روڈ میں جھڑپ کے بعد کشیدگی

11 Apr 2017


رانچی: مین روڈ پر واقع  اقرا مسجد کے پاس بجرنگ دل کے ایک جلوس میں شامل نوجوانوں کے ذریعہ اشتعال انگیز نعرہ لگا ئے جانےکے درمیان جھڑپ کی اطلاع ہے.  دو پہر تقر یبا ً ڈیڑھ بجے ہو ئی اس جھڑپ کے بعد مین روڈ میں بھاری پولس فورس کی تعیناتی کر دی گئی ہے. جھڑپ کی اطلاع کے بعد مین روڈ کی دکانیں بند ہو گئی ہیں. ڈیلی مارکیٹ اور روسپا ٹاور بھی بند ہو گیا ہے. پپولس فورس کے ذریعہ بھیڑ ہٹانے کی کو شش دوران لا ٹھی چا رج کئے جانے اور آنسو گیس کے گو لے دا غے جانے کی بھی خبر ہے۔ ڈی آئی جی پو لس نے بھیڑ سے بات کی اور امن برقرار رکھنے کی اپیل کی. مین روڈ کے اقرامسجد علاقے میں کشیدگی قا ئم ہے۔

. وہیں كڈرو علاقے میں بھی پولس کے استعمال کی خبر ہے. شہر کے بہت سے دوسرے علاقوں سے بھی دکانیں بند ہونے کی اطلاع ہے.ڈورنڈہ علا قے میں دوکانیں بند ہو گئی ہیں۔ وہیں یہ خبر بھی ملی ہے کہ سجاتا چوک سے مین روڈ کی جانب جانے والی سڑک کوآمد ورفت کے لئے کھول دیا گیا ہے، کچھ دیر پہلے انتظامیہ نے احتیاط برتتے ہوئے اس راستے کو بند کر دیا تھا. انتظامیہ مکمل طور پر الرٹ ہے. رانچی کے كیپٹول ہل ہوٹل کے قریب گاڑیوں میں توڑ پھوڑ کی گئی ہے. حالات کشیدہ، لیکن کنٹرول میں ہے. انتظامیہ نے افواہوں پر توجہ نہ دینے کی اپیل کی ہے. اگرچہ کشیدگی کی خبر پورے شہر میں پھیل چکی ہے، لیکن کہیں سے بھی کسی ناخوشگوار واقعہ کی خبر نہیں ہے. کلب روڈ کا علاقہ مکمل طور پرسکون ہے. کئی اسکولوں نے والدین کو میسج کر اپنے بچوں کو اسکول لے جانے کی اطلاع دی ہے.