Urdu Newspaper, Epaper, published from Ranchi Jharkhand, Jadeed Bharat

جديد بهارت

Jadeed Bharat

No. 1 Urdu Daily Newspaper of Jharkhand


  • تیونس: سیکورٹی فورسز کی کارروائی، القاعدہ کا شدت پسند ہلاک

    تیونس: سیکورٹی فورسز کی کارروائی، القاعدہ کا شدت پسند ہلاک

    تیونس کی سیکورٹی فورسز نے القاعدہ کے ایک اہم کمانڈر ابو مصعب عبدالودود کے ایک سرکردہ ساتھی کو ہلاک کر دیا ہے۔ یہ بات ہفتہ کو سرکاری ذرائع نے خبر رساں ادارے روئیٹرز کو بتائی ہے۔ تیونس کی سیکورٹی فورسز 2015ء سے چوکس ہیں جب داعش کے مسلح شدت پسندوں نے دارالحکومت تونس میں واقع عجائب گھر میں درجنوں غیر ملکی سیاحوں کو ہلاک کر دیا تھا۔ الجزائر کا شہری بلال کوبی عبدالودود کا نہایت قریبی ساتھی تھا اور اسے الجزائر کی سرحد کے قریب ایک چھاپہ مار کارروائی کے دوران اس وقت ہلاک کر دیا گیا جب وہ اس خطے میں القاعدہ کو منظم کرنے کے مشن پر کام کر رہا تھا۔ تیونس کی سیکورٹی فورسز نے گزشتہ سال مراد شعیبی سمیت کئی شدت پسندوں کو ہلاک کیا تھا۔ مراد شعیبی، عقبہ ابن نافع نامی شدت پسند گروپ کا ایک رہنما تھا جو کئی سالوں تک تیونس کے پہاڑی علاقے میں سیکورٹی فورسز کے خلاف برسرپیکار رہا۔ تیونس کو بیرونی ملکوں سے واپس اپنے وطن لوٹنے والے شدت پسندوں سے بھی اب خطرہ درپیش ہے۔ گزشتہ سالوں کے دوران 3 ہزار سے زائد تیونس کے شہری شدت پسندوں کی طرف سے لڑائیوں میں حصہ لینے کے لیے شام، عراق اور لیبیا گئے تھے۔ 

  • برطانیہ یورپی یونین کے ساتھ جامع تجارتی معاہد ے کا متمنی

    برطانیہ یورپی یونین کے ساتھ جامع تجارتی معاہد ے کا متمنی

    برطانیہ کی وزیر اعظم تھریسا مے نے کہا ہے کہ برطانیہ یورپی یونین سے الگ ہونے کے بعد اس کے ساتھ ایک جامع تجارتی اور دفاعی سمجھوتے کرنا چاہے گا۔ تھریسا مے نے یہ بات ایک بیان میں کہی ہے جو ہفتے کو جرمن اخبار 'بلڈ' میں شائع ہوا۔ مے نے مزید کہا کہ ان کی حکومت مذاکرات میں اپنے ہی مفاد کی بات نہیں کرتی بلکہ یہ اس سے بہتر تجارتی معاہدے کی بات کرتی ہے جو یورپی یونین کا ناروے اور کینیڈا کے ساتھ ہے کیونکہ ان کے بقول برطانیہ ان ملکوں کے مقابلے میں ایک مختلف حیثیت میں یورپی یونین کے ساتھ  مذاکرات کر رہا ہے۔ مے نے اخبار کو بتایا کہ "یہ ایسا نہیں کہ ہم وہ بات کرتے ہیں جو صرف ہمارے لیے صحیح ہے۔۔۔ہم ایک جامع تجارتی معاہدے اور دفاعی سمجھوتے کے بارے میں بات چیت کرنا چاہتے ہیں۔ ہم جس حیثیت سے بات چیت شروع کرنا چاہتے ہیں وہ کینیڈا اور ناروے سے مختلف ہے۔" برطانیہ اور یورپی یونین نے گزشتہ ماہ ایک دوسرے سے الگ ہونے کا معاہدہ کیا جس کی وجہ سے مستقبل کے تجارتی تعلقات سے متعلق بات چیت اور برطانیہ کے یورپی یونین سے الگ ہونے کے معاملے کے خوش اسلوبی سے طے کرنے کی راہ ہموار ہوئی ہے۔ برطانیہ کی وزیر اعظم نے کہا کہ "ہم یورپی یونین کو چھوڑ رہے ہیں لیکن یورپ سے الگ نہیں ہو رہے۔"

  • شمالی یورپ میں شدید طوفان سے نو افراد ہلاک

    شمالی یورپ میں شدید طوفان سے نو افراد ہلاک

    'جرمن ویدر سروس' کے مطابق 2007ء کے بعد جرمنی کو نشانہ بنانے والا یہ سب سے شدید طوفان ہے جسے 'فریڈریکے' کا نام دیا گیا ہے۔

  • ترکی: ہنگامی حالت میں چھ ماہ کی مزید توسیع

    ترکی: ہنگامی حالت میں چھ ماہ کی مزید توسیع

    اس کی اطلاع ترکی کے سرکاری خبر رساں ادارے، ’انادولو‘ نے دی ہے۔ ترکی کے آئین کے مطابق، ہنگامی صورتِ حال زیادہ سے زیادہ چھ ماہ تک جاری رہ سکتی ہے

  • قازقستان میں بس کے حادثے میں 52 مسافر ہلاک

    قازقستان میں بس کے حادثے میں 52 مسافر ہلاک

    قازقستان کی وزارت داخلہ نے کہا ہے حادثہ ساڑھے دس بجے کے لگ بھگ پیش آیا، تاہم اس بارے میں مزید کوئی تفصیل نہیں دی گئی۔

  • اقوام متحدہ کا ویانا میں شام امن مذاکرات کا اعلان

    اقوام متحدہ کا ویانا میں شام امن مذاکرات کا اعلان

    ایک بیان میں ڈی مستورا نے کہا ہے کہ یہ ملاقات 25 اور 26 جنوری کو منعقد ہوگی جس میں زیادہ تر آئینی امور پر دھیان مبذول رہے گا

  • چلی: پوپ فرانسس کی جنسی زیادتی کے شکار بچوں سے ملاقات

    چلی: پوپ فرانسس کی جنسی زیادتی کے شکار بچوں سے ملاقات

    کیتھولک مسیحوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے منگل کو چلی کے دورے کے موقع بچوں کے ساتھ ہونے والے جنسی زیادتی کے واقعات پر نا صرف دکھ اور شرمندگی کا کھلے عام اظہار کیا بلکہ اس کا نشانہ بننے والوں کے ساتھ ایک نجی ملاقات کے دوران ان کے دکھ درد پر روئے اور ان کے لیے دعا بھی کی۔ ویٹیکن کے ترجمان گریگ برک نے کہا کہ یہ ملاقات چلی کے دارالحکومت سینٹیاگو میں ویٹی کن کے سفارت خانے میں ہوئی۔ ترجمان نے کہا کہ اس موقع پر کوئی دوسرا شخص موجود نہیں تھا، ’’صرف پوپ اور زیادتی کا نشانہ بننے والے موجود تھے۔‘‘ انہوں نے مزید کہا کہ "ایسا اس لیے کیا گیا تاکہ وہ اپنی تکالیف کے بارے میں پوپ فرانسس سے بات کر سکیں، جنہوں نے ان کی بات سنی ان کے لیے روئے اور دعا کی۔" ایسا دوسری بار ہوا کہ اپنے بیرونی دورے کے دوران پوپ نے جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والوں سے ملاقات کی ہو، آخری بار ایسی ملاقات امریکہ کے شہرفلڈیلفیا میں 2015ء میں ہوئی۔ برک نے اگرچہ اس ملاقات کی تفصیل بتانے سے گریز کیا تاہم ان کا بیان پوپ کی دن پھر پور مصروفیت کے بعد سامنے آیا جس دوران انہوں نے جنسی زیادتی کے معاملے پر دوبار بات کی اور ایک بار انہوں نے ان زیادتیوں پر معذرت کرتے ہوئے کہا کہ اس کی وجہ سے اس کا نشانے بننے والوں کو "ناقابل تلافی نقصان"پہنچا۔ پوپ فرانسس کی طرف سے پہلا بیان چلی کے صدارتی محل میں دیا گیا جو کہ ایک غیر معمولی بات ہے کیونکہ پوپ عموماً جنسی زیادتی کے واقعات پر چرچ کے عہدیداروں سے بات کرتے ہیں نا کہ سیاستدانوں سے۔  تاہم بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے اسکینڈل کے خلاف چلی میں آواز بلند کی جا رہی ہے اور کیتھولک مذہب کے ماننے والوں کے ملک میں سیاسی رہنماؤں نے چرچ کے عہدیداروں پر تنقید کی ہے۔

  • روس: کم سن بچیوں سے زیادتی پر مسیحی مبلغ کو 14 سال قید

    روس: کم سن بچیوں سے زیادتی پر مسیحی مبلغ کو 14 سال قید

    روس میں ایک مسیحی مبلغ کو کم سن بچیوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے جرم میں 14 سال قید کی سزا سنائی گئی ہے۔ لینن گراڈ کے علاقے پریوزرسک میں بدھ کو عدالت نے مبلغ گلیب گروزسکی پر الزامات ثابت ہونے یہ سزا سنائی۔ ان پر الزام تھا کہ انھوں نے 2011ء میں ایک مسیحی سمر کیمپ کے دوران کم سن بچیوں کے ساتھ جنسی زیادتی کی۔ اُس وت وہ سینیٹ پیٹرز برگ کے نواح میں واقع ایزمشن کیتھڈرل سے وابستہ تھے۔ مزید برآں ان پر 2013ء میں یونان میں ہونے والے ایک ایسے ہی سمر کیمپ کے دوران بھی کم سن بچیوں کے ساتھ جنسی زیادتی کا الزام تھا۔ وہاں وہ سینیٹ جان دی واریئر چرچ کے ریکٹر کے طور پر کام کر رہے تھے۔ روسی حکام نے 2013ء میں گروزسکی کے وارنٹ گرفتاری جاری کیے تھے اور نھیں ستمبر 2016ء میں اسرائیل سے روس منتقل کیا گیا۔ گروزسکی نے اسرائیلی حکام کو بتایا تھا کہ انھیں اسرائیل میں روسی آرتھوڈکس چرچ نے تعینات کیا ہے لیکن ان کے ادارے کے مطابق گروزسکی پر ان الزامات کے باعث مشن پہلے ہی ان کی خدمات برخاست کر چکا تھا۔

  • اکثر ممالک میں جمہوری اصول اور آزادی کی صورتحال ابتر رہی: فریڈم ہاؤس

    اکثر ممالک میں جمہوری اصول اور آزادی کی صورتحال ابتر رہی: فریڈم ہاؤس

    امریکہ میں قائم ایک موقر غیر سرکاری تنظیم 'فریڈم ہاؤس' نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں انتخابات کی ساکھ اور آزادی صحافت جیسے  جمہوری اصول گزشتہ برس بھی تنزلی کا شکار رہے اور یہ سلسلہ گزشتہ 12 سالوں سے مسلسل ایسا ہی چلا آ رہا ہے۔ تنطیم سے وابستہ دانشور آرچ پوڈنگٹن نے وائس آف امریکہ کو بتایا کہ "2017ء میں ایسے ممالک کی تعداد کہیں زیادہ تھی جہاں آزادی کی صورتحال میں ابتری دیکھی گئی۔" فریڈم ہاؤس کی طرف سے جاری کردہ تازہ رپورٹ 195 ممالک کا جائزہ لے کر مرتب کی گئی اور اس کے مطابق 88 ممالک کو "آزاد"، 58 کو "جزوی آزاد" اور 49 کو "پابند" شمار کیا گیا۔ رپورٹ میں امریکہ کے بارے میں کہا گیا کہ یہ ملک بطور جمہوری چیمپیئن کمزور رہا اور 2016ء کے صدارتی انتخابات میں مبینہ روسی مداخلت کی جاری تفتیش بھی اس کی ساکھ پر اثر انداز ہوئی۔ پوڈنگٹن کے بقول "(یہاں) انتخابات کے معاملے میں مسائل ہیں جو آپ کو اکثر مضبوط جمہوریتوں میں دیکھنے میں نہیں آتے۔" ان کے نزدیک انتخابی مہم میں پیسے کا بکثرت استعمال اور ریاست کی طرف سے ووٹنگ کے طریقہ کار کو مزید مشکل بنانا ایسے عوامل ہیں جو جمہوری عمل کو متاثر کرسکتے ہیں۔ فریڈم ہاؤس نے موجودہ امریکی انتظامیہ کو درپیش بعض اخلاقی قضیوں بشمول ٹرمپ خاندان کے کاروباری تعلقات اور ان کے مفادات کا ٹکراؤ اور صدر کی طرف سے اپنے ٹیکس گوشوارے ظاہر نہ کرنے کی بابت بھی رپورٹ میں تذکرہ کیا۔ تنظیم نے چینی صدر شی جنپنگ کی زیر قیادت چین میں جبر میں اضافے کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ یہ اس ملک میں آزادی کی تنزلی کے عوامل میں شامل ہے۔ پوڈنگٹن نے بتایا کہ چین کی حکومت کا صحافیوں اور مختلف شعبوں میں اثرو رسوخ اور سنسرشپ کا نظام اسے آسٹریلیا، نیوزی لینڈ، کینیڈا اور یہاں تک کہ امریکہ سے بھی کم پوزیشن پر رکھے ہوئے ہے۔ "جزوی آزاد" ممالک جیسے کہ میانمار کے بارے میں فریڈم ہاؤس کے مبصرین کا کہنا ہے کہ فوجی اقتدار سے جمہوریت کی طرف منتقلی کے تناظر میں یہاں کچھ بہتری تو دیکھی گئی لیکن یہاں خاص طور پر روہنگیا مسلمانوں کی وسیع پیمانے پر بنگلہ دیش ہجرت سمیت انسانی حقوق کی صورتحال خراب ہوئی۔ افغانستان اور عراق میں جاری جنگوں کے باوجود فریڈم ہاؤس کا کہنا ہے کہ ان ممالک پر 2018ء میں نظر رکھنے کی ضرورت ہے۔ پوڈنگٹن نے وائس آف امریکہ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ "ضروری نہیں کہ اس کا مطلب یہ ہو کہ یہ ملک صحیح یا غلط سمت میں جا رہے ہیں۔ اس کا مطلب یہ کہ ہے کہ وہاں بہت کچھ ہو رہا ہے اور ہم یہ پیش گوئی کرتے ہیں کہ وہاں آئندہ سال تبدیلیاں رونما ہو سکتی ہیں۔" امریکی ممالک میں خاص طور زمبابوے میں طویل عرصے تک برسراقتدار رہنے والے رابرٹ موگابے کی منصب صدارت سے علیحدگی کے تناظر میں فریڈم ہاؤس کا کہنا تھا کہ یہ ملک بحیثیت مجموعی "جزوی آزادی" کے زمرے میں آتا ہے۔



Promo Image
  • کابل: ہوٹل پر دہشت گرد حملہ، غیر ملکی سمیت چھ ہلاک

    کابل: ہوٹل پر دہشت گرد حملہ، غیر ملکی سمیت چھ ہلاک

    افغانستان کے دارالحکومت کابل کے ایک پرتعیش ہوٹل میں دہشت گردوں کے خلاف 12 گھنٹوں کی کارروائی کے بعد اتوار کی صبح سکیورٹی فورسز نے عمارت کو کلیئر کر دیا ہے۔ ہفتہ کو دیر گئے انٹرکانٹیننٹل ہوٹل پر دہشت گردوں نے حملہ کیا تھا اور رات بھر سکیورٹی فورسز کے ساتھ ان کی جھڑپ جاری رہی۔ حکام کے مطابق تمام پانچ حملہ آور مارے جا چکے ہیں جب کہ اس دوران ایک غیر ملکی خاتون سمیت چھ افراد ہلاک ہوئے۔ بتایا جاتا ہے کہ مرنے والوں میں پاکستانی ساحلی شہر کراچی کے لیے حال ہی میں نامزد کیے گئے افغان قونصل جنرل بھی شامل ہیں۔ اتوار کو وزارت داخلہ کے ایک ترجمان نصرت رحیمی نے وائس آف امریکہ کو بتایا کہ ہوٹل کی چھٹی منزل پر چھپے آخری دہشت گرد نے دن گیارہ بجے کے قریب کچھ کو بارودی مواد سے اڑا لیا جسے وہاں آگ بھڑک اٹھی۔ ان کے بقول اس حملے میں تین سکیورٹی اہلکاروں سمیت سات افراد زخمی ہوئے جب کہ 41 غیر ملکیوں سمیت 160 سے زائد افراد کو یہاں سے بحفاظت نکال لیا گیا۔ یہاں افغان فضائی کمپنی 'کے اے ایم' کے کارکنان بھی ٹھہرے ہوئے تھے جن میں سے متعدد تاحال لاپتا ہیں۔ ان افراد میں ونیزویلا اور یوکرین کے شہری بھی بتائے جاتے ہیں۔ طالبان عسکریت پسندوں نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کا ہدف افغان اور امریکی سکیورٹی اہلکار تھے۔ یہ کابل کا دوسرا بڑا پرتعیش ہوٹل ہے اور ایک پہاڑی چوٹی پر واقع ہے اور یہاں عموماً سکیورٹی کے سخت انتظامات ہوتے ہیں۔ اسی ہوٹل کو 2011ء میں بھی شدت پسندوں نے نشانہ بنایا تھا۔ وزیر داخلہ وارث برمک نے ریڈیو فری یورپ کو بتایا کہ ایک پرائیویٹ سکیورٹی کمپنی نے دو ہفتے قبل ہی اس ہوٹل کی سکیورٹی سنبھالی تھی۔ ادھر پاکستان نے اس دہشت گرد حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردی کسی بھی صورت قابل قبول نہیں۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ چند دن قبل ہی کابل میں امریکی سفارتخانے نے ایک انتباہ جاری کیا تھا جس میں ہوٹلوں پر دہشت گرد حملوں کی اطلاعات کا تذکرہ کیا گیا تھا۔

  • کابل کے ایک لگژری ہوٹل میں مسلح گروپ کا حملہ

    کابل کے ایک لگژری ہوٹل میں مسلح گروپ کا حملہ

    خبررساں ادارے اے ایف پی نے افغان حکام کے حوالے سے کہا ہے کہ چار مسلح حملہ آور عمارت کے اندر موجود ہیں ۔اور وہ مہمانوں کو پر فائرنگ کر  رہے ہیں۔

  • کشمیر میں ورکنگ باؤنڈری پر جھڑپیں جاری، مزید 6 افراد ہلاک

    کشمیر میں ورکنگ باؤنڈری پر جھڑپیں جاری، مزید 6 افراد ہلاک

    متنازعہ کشمیر میں پاک-بھارت سرحدوں پر طرفین کے درمیان ساعتی مقابلوں کی تاریخ پرانی ہے حالانکہ دونوں ملکوں کے درمیان نومبر 2003 میں فائر بندی کا ایک سمجھوتہ بھی ہوا تھا۔

  • کشمیر میں بھارت پاکستان سرحد پر تازہ جھڑپوں میں مزید چار افراد ہلاک

    کشمیر میں بھارت پاکستان سرحد پر تازہ جھڑپوں میں مزید چار افراد ہلاک

    کشیدہ صورت حال کے باعث دونوں جانب کی سرحدی آبادیوں کے سینکڑوں کنبے محفوظ مقامات کو منتقل ہو رہے ہیں۔

  • دہلی حکومت کو دھچکہ،20 ارکان اسمبلی کی نااہلی کا خطرہ

    دہلی حکومت کو دھچکہ،20 ارکان اسمبلی کی نااہلی کا خطرہ

    70 رکنی اسمبلی میں پارٹی کے ارکان کی تعداد 65 ہے۔ اگر20 ارکان نااہل قرار دے دیے جاتے ہیں تب بھی حکومت کے لیے کوئی خطرہ نہیں ہوگا۔

  • افغانستان میں داعش کے ابھرنے میں ہمارا کوئی ہاتھ نہیں، امریکہ

    افغانستان میں داعش کے ابھرنے میں ہمارا کوئی ہاتھ نہیں، امریکہ

    پچھلے سال حامد کرزئی نے کئی میڈیا گروپس کے ساتھ اپنے انٹرویوز میں جن میں وائس آف امریکہ بھی شامل ہے، یہ کہا تھا کہ امریکہ داعش کو اپنے ایک ہتھیار کے طور پر استعمال کر رہا ہے۔

  • کشمیر میں ورکنگ باؤنڈری پر تازہ جھڑپوں میں 4 افراد ہلاک، متعدد زخمی

    کشمیر میں ورکنگ باؤنڈری پر تازہ جھڑپوں میں 4 افراد ہلاک، متعدد زخمی

    جموں کے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ارون شرما نے کہا کہ پاکستانی فائرنگ کا دندان شکن جواب دیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فائرنگ اور جوابی فائرنگ کا تازہ واقعہ جموں کے قریب واقع رنبیر سنگھ پورہ علاقے میں پاک بھارت سرحد پر پیش آیا۔

  • بھارت کا بین البراعظمی  بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ

    بھارت کا بین البراعظمی بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ

    بھارت کا کہنا ہے کہ انہوں نے  ایک جدید ترین بین البراعظمی  بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ بھارت کی وزارت دفاع نے جمعرات کے روز  اپنی ایک ٹویٹ میں کہا ہے   یہ میزائل مشرقی بھارتی ریاست اوڈیشا کے ساحلی جزیرے  عبدالکلام  سے داغا گیا۔ یہ میزائل اگنی فائیو آئی سی بی ایم قسم کا تھا۔ بھارت کے ایک اقتصادی جریدے ہندو بزنس لائن  نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ تین منزلہ میزائل کو ایک موبائل لانچر سے داغا گیا، جس نے تقریباً 5 ہزار کلومیٹر کا فاصلہ لگ بھگ 20 منٹ میں طے کیا۔ سن 2012 میں اگنی فائیو قسم کے میزائل متعارف کرائے جانے کے بعد یہ  اس کا پانچواں تجربہ تھا۔ اس سے پہلے ایک اور تجربہ پچھلے مہینے کیا گیا تھا۔

  • حافظ سعید اور متعدد کشمیریوں کےخلاف دہشت گردی کی مبینہ فنڈنگ کا مقدمہ

    حافظ سعید اور متعدد کشمیریوں کےخلاف دہشت گردی کی مبینہ فنڈنگ کا مقدمہ

    چارج شیٹ کے مطابق اس سازش میں حافظ سعید اور سید صلاح الدین کے ساتھ ساتھ سرکردہ کشمیری علیحدگی پسند شامل تھے۔


  • پاکستان کرکٹ ٹیم بمقابلہ پاکستان کرکٹ بورڈ

    پاکستان کرکٹ ٹیم بمقابلہ پاکستان کرکٹ بورڈ

    پچھلے دس برسوں میں اگر ہر ٹیم اپنے ہوم گراونڈز پر ناقابل تسخیر ہوتی جا رہی ہے تو اس میں کلیدی کردار ٹی 20 لیگز، انٹرنیشنل کرکٹ کی کثرت اور مشکل شیڈولنگ کا ہے، ورنہ وکٹیں تو پہلے بھی ایسی ہی ہوتی تھیں۔

  • محمد عباس اور سہیل خان لیسٹرشائر کے لیے کھیلیں گے

    محمد عباس اور سہیل خان لیسٹرشائر کے لیے کھیلیں گے

    انگلش کاؤنٹی لیسٹرشائر نے پاکستانی فاسٹ بولرز محمد عباس اور سہیل خان کے ساتھ 2018 کے سیزن کے لیے معاہدہ کر لیا ہے۔

  • ورلڈ الیون کے دورے کے بعد ہاکی لیگ کا انعقاد کے امکانات

    ورلڈ الیون کے دورے کے بعد ہاکی لیگ کا انعقاد کے امکانات

    پاکستان کے دورے پر آنے والی ہاکی ورلڈ الیون نے پاکستان الیون کے خلاف میچ ایک کے مقابلے میں پانچ گول سے جیت لیا ہے۔ پاکستان ہاکی فیڈریشن اب ملک میں ہاکی لیگ کے انعقاد کے لیے منصوبہ بندی کر رہی ہے۔

  • یہ ہار سرفراز کی ٹیم کی نہیں ہے

    یہ ہار سرفراز کی ٹیم کی نہیں ہے

    دنیا کا کوئی بھی کپتان میچ ہارنے کے لیے میدان میں نہیں اترتا۔ وہ اپنی صلاحیتوں سے شکست نہیں کھاتا، ان غلط فیصلوں سے ہار جاتا ہے جو اس کے لیے ناگزیر ٹھہرتے ہیں۔

  • پاکستان کے خلاف نیوزی لینڈ کا ون ڈے سیریز میں وائٹ واش

    پاکستان کے خلاف نیوزی لینڈ کا ون ڈے سیریز میں وائٹ واش

    ویلنگٹن میں کھیلے جانے والے پانچویں اور آخری ون ڈے کرکٹ میچ میں نیوزی لینڈ نے پاکستان کو 15 رنز سے شکست دے کر سیریز پانچ صفر سے جیت لی ہے۔

  • آئی سی سی ایوارڈز: حسن علی 2017 کے ’ایمرجنگ کرکٹر آف دی ایئر‘

    آئی سی سی ایوارڈز: حسن علی 2017 کے ’ایمرجنگ کرکٹر آف دی ایئر‘

    آئی سی سی ایوارڈز میں پاکستان کے حسن علی کو سنہ 2017 کا ’ایمرجنگ کرکٹر آف دی ایئر‘ قرار دیا گیا ہے جبکہ چیمپیئز ٹرافی میں پاکستان کی فتح کو شائقین نے سال کا بہترین لمحہ چنا ہے۔

  • ’اِدھر اُدھر کی کرکٹ پر کنٹرول کرنا ہو گا‘

    ’اِدھر اُدھر کی کرکٹ پر کنٹرول کرنا ہو گا‘

    پی سی بی کی سلیکشن کمیٹی کے سربراہ انضمام الحق سمجھتے ہیں کہ پاکستانی کرکٹر حالیہ دنوں میں بہت زیادہ کرکٹ پاکستانی ٹیم کے بجائے دوسری جگہوں پر کھیلتے رہے ہیں جسے کنٹرول کر کے ان کی کارکردگی میں بہتری لانے کی ضرورت ہے۔

  • سینچورین ٹیسٹ میں بھی انڈیا کو شکست، سیریز جنوبی افریقہ کے نام

    سینچورین ٹیسٹ میں بھی انڈیا کو شکست، سیریز جنوبی افریقہ کے نام

    جنوبی افریقہ نے انڈیا کو سنچورین میں کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ میں 135 رنز سے شکست دے کر تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں دو صفر کی ناقابل شکست برتری حاصل کر لی۔

  • سچن تیندولکر کے بیٹے کا خواب

    سچن تیندولکر کے بیٹے کا خواب

    سچن تیندولکر کے صاحبزادے ارجن تیندولکر اپنے باپ کے نقشِ قدم پر چل کر نام بنانا چاہتے ہیں لیکن تھوڑے مختلف انداز میں۔

Promo Image

Health Section
  • نیند کی کمی ذہنی دباؤ اور پریشانی کا باعث

    نیند کی کمی ذہنی دباؤ اور پریشانی کا باعث

    آج کل سمارٹ فون، آئی پیڈ اور نوٹ بک کی طرح کے آلات نے زندگی بہت مصروف کر دی ہے۔ کچھ لوگ سونے سے پہلے بستر پر اور نیند کے دوران آنکھ کھلنے پر سوشل میڈیا، یعنی فیس بک، یوٹیوب، ٹویٹر دیکھنا شروع کر دیتے ہیں جو کم نیند کی ایک وجہ بن رہی ہے

  • کیا پاکستان کے غریب بھارت کے غریبوں سے زیادہ مالدار ہیں؟ سینیٹ کمیٹی

    کیا پاکستان کے غریب بھارت کے غریبوں سے زیادہ مالدار ہیں؟ سینیٹ کمیٹی

    سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے صحت کے رکن نعمان وزیر نے پاکستان میں اسٹنٹ کے مہنگے داموں فروخت پر وزارت صحت کے حکام سے سوال کیا کہ کیا ہمارے ملک کے غریب بھارت کے غریبوں سے زیادہ مالدار ہیں؟ اسلام آباد میں سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے صحت کا اجلاس سجاد طوری کی صدارت میں منعقد ہوا۔ اجلاس کے دوران کمیٹی کی جانب سے اسٹنٹ کے معیار اور قیمت پر بھی سوالات اٹھائے گئے، ارکان کمیٹی نے کہا کہ پاکستان میں غیر معیاری اسٹنٹ فروخت کیے جارہے اور ان کی رقم بھی زیادہ ہے۔ اجلاس کے دوران اس بات کا انکشاف بھی کیا گیا کہ دل میں ڈالے جانے والے اسٹنٹ پاکستان میں بھارت سے کئی گنا مہنگے فرخت ہو رہے ہیں، جس پر ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کے سی ای او کی جانب سے بریفنگ بھی دی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ ملک میں 45 ہزار کا اسٹنٹ ڈیڑھ لاکھ روپے میں فروخت کیے جانے اور غیر معیاری اسٹنٹ کی فروخت کی شکایات سامنے آئیں تھی جبکہ اس کام میں سینئر ڈاکٹرز بھی ملوث پائے گئے تھے۔ اس صورتحال کے پیش نظر بہتری کے لیے اقدامات کیے گئے اور اب ڈیڑھ لاکھ میں فروخت کیا جانے والا بغیر کوٹنگ والا اسٹنٹ 24 سے 40 ہزار روپے میں دستیاب ہے۔ بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ کوٹنگ والا اسٹنٹ اب 75 ہزار سے ایک لاکھ 20 ہزار میں دستیاب ہے جبکہ اسٹنٹ فروخت کرنے والی کمپنیوں کی رجسٹریشن کا نظام بھی بنایا گیا ہے۔ رکن کمیٹی نعمان وزیر کی جانب سے کہا گیا کہ بھارت میں باقاعدہ قانون سازی کے تحت بغیر کوٹنگ والے اسٹنٹ کی قیمت 7.260 روپے مقرر کی گئی ہے جبکہ پاکستانی روپے میں اسٹنٹ کی قیمت 10 ہزار روپے بنتی ہے۔ نعمان وزیر نے کہا کہ کوٹنگ والے اسٹنٹ کی قیمت بھارت میں 29 ہزار ہے جو پاکستانی روپے میں 39 ہزار روپے بنتے ہیں۔ انہوں نے اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ 10 ہزار کے بجائے 25 سے 40 ہزار اور 39 ہزار والے اسٹنٹ کی قیمت 1.20.000 ہزار کیوں مقرر کی گئی ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا ہمارے ملک کے غریب بھارت کے غریب سے زیادہ مالدار ہیں؟ انہوں نے ہدایت کی کہ اسٹنٹ کی قیمت انڈیا اور بنگلہ دیش کی مقررہ قیمت سے زائد نہ ہو اس بات کو یقینی بنایا جائے۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ اسلام آباد میں آئس کا نشہ بڑھتا جارہا شہر کے تمام اسپتال آئس کا نشہ کرنے والے بچوں سے بھرے پڑے ہیں اور یہ نشہ بچوں کو تباہ کر رہا ہے۔ سینیٹ کمیٹی کے اجلاس میں تعلیمی اداروں کے قریب سگریٹس کی فروخت پر بھی تشویش کا اظہار کیا گیا۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ تعلیمی اداروں کے قریب سگریٹ فروخت ہو رہے ہیں اور تعلیم حاصل کرنے والے بچوں میں سگریٹ نوشی کا رجحان بڑھ رہا ہے۔ انہوں نے سفارش کی کہ آئس کے نشے سمیت تعلیمی اداروں کے قریب سگریٹ کی فروخت پر بھی پابندی عائد کی جائے۔

  • کراچی میں مضر صحت دودھ کی فراہمی پر سپریم کورٹ کی برہمی

    کراچی میں مضر صحت دودھ کی فراہمی پر سپریم کورٹ کی برہمی

    چیف جسٹس نے حکم دیا آج ہی کراچی کی مارکیٹوں  سے پیکٹ والے دودھ کے تمام برانڈ پاکستان کونسل آف سائنٹفک  ریسرچ سے ٹیسٹ کےلئے بھیجے جائیں۔

  • خیبر پختونخوا میں خواجہ سراؤں کے لئے سرکاری علاج کی سہولیات

    خیبر پختونخوا میں خواجہ سراؤں کے لئے سرکاری علاج کی سہولیات

    پاکستان میں خواجہ سراوں کو سماجی رویے سمیت تعلیم اور صحت کے میدان میں مختلف مشکلات کا سامنہ ہے۔ خیبر پختونخوا کی حکومت کی طرف سے لیا جانے والا یہ اقدام پاکستان میں اپنی نوعیت کی پہلی کوشش ہے

  • تپ دق سے کم وقت میں چھٹکارہ ممکن ہے

    تپ دق سے کم وقت میں چھٹکارہ ممکن ہے

    تپ دق دنیا کے سب سے زیادہ ہلاکت خیز امراض میں سے ایک ہے۔ اگرچہ یہ مرض اب قابل علاج ہے لیکن اس کے باوجود تپ دق کی ہلاکتوں کا گراف اونچا ہونے کی وجہ ہے کہ اس کے علاج پر طویل عرصہ لگتا ہے۔ جو چھ مہینوں سے لے کر بعض واقعات میں ایک سال سے زیادہ مدت تک پھیل جاتا ہے۔

  • ’طلوع صبح کی بچی‘ نے قدیم تاریخ کا دروازہ کھول دیا

    ’طلوع صبح کی بچی‘ نے قدیم تاریخ کا دروازہ کھول دیا

    ماہر آثار قدیمہ پورٹر نے کہا کہ اس بچی کی دریافت سے اس عہد کے لوگوں کی تاریخ اور زندگی  کے متعلق جاننے کے لیے ایک ایسی کھڑکی کھل گئی ہے جس کی اس سے پہلے کوئی نظیر موجود نہیں ہے۔

  • جیلوں میں صاف پانی کی عدم دستیابی پر سپریم کورٹ کا نوٹس

    جیلوں میں صاف پانی کی عدم دستیابی پر سپریم کورٹ کا نوٹس

    طبی ماہرین اور اقوامِ متحدہ کے اندازوں کے مطابق پاکستان میں ہر سال ہونے والی اموات میں 30 سے 40 فی صد آلودہ پانی پینے سے ہونے والی بیماریوں کے باعث ہوتی ہیں۔

  • سانس کی بیماریوں سے بچنا ہے تو روزانہ ٹماٹر کھائیں

    سانس کی بیماریوں سے بچنا ہے تو روزانہ ٹماٹر کھائیں

    نظام تنفس  سے متعلق یورپ میں شائع ہونے والے ایک سائنسی جریدے  میں چھپنے والی رپورٹ  میں بتایا گیا ہے کہ  یہ تحقیق جرمنی، برطانیہ اور ناروے سے تعلق رکھنے والے 680 افراد پر کی گئی جنہوں نے سن 2002 میں خود کو اس پروگرام کے رجسٹر کیا تھا۔

  • نظر رکھیے۔۔ بچے ’آن لائن‘ بھی محفوظ نہیں: یونیسیف

    نظر رکھیے۔۔ بچے ’آن لائن‘ بھی محفوظ نہیں: یونیسیف

    دنیا میں انٹرنیٹ استعمال کرنے والا ہر تیسرا یوزر کوئی بچہ ہے۔ لیکن، اس کے باوجود ڈیجیٹل دنیا کے نقصان اور خطرات سے بچوں کو بچانے کے لئے اور انہیں محفوظ آن لائن مواد فراہم کرنے کے لئے کوئی خاص انتظامات یا بندوبست نہیں کیا گیا۔


  • ’گاڑی کی سیٹوں پر خون نہ لگے‘، پولیس کا زخمیوں کی مدد سے انکار

    ’گاڑی کی سیٹوں پر خون نہ لگے‘، پولیس کا زخمیوں کی مدد سے انکار

    اطلاعات کے مطابق انڈیا میں دو نوجوان ٹریفک حادثے کے بعد اس وقت ہلاک ہو گئے جب مبینہ طور پر پولیس نے انھیں قریبی ہسپتال لے جانے سے انکار کر دیا۔

  • کابل: انٹرکانٹینینٹل ہوٹل پر حملہ، 14 شہری ہلاک

    کابل: انٹرکانٹینینٹل ہوٹل پر حملہ، 14 شہری ہلاک

    افغانستان حکام کے مطابق کابل کے انٹرکانٹینینٹل ہوٹل پر ہونے والے چار مسلح افراد کے حملہ اور بعد ازاں قبضے کو ختم کر دیا گیا ہے۔ اس کارروائی میں 14 شہری ہلاک اور چھ زخمی ہوئے۔

  • مشکلات کا شکار عام آدمی پارٹی مخالفین کے لیے اب بھی چیلینج

    مشکلات کا شکار عام آدمی پارٹی مخالفین کے لیے اب بھی چیلینج

    انڈیا کے الیکشن کمیشن نے دلی اسمبلی میں عام آدمی پارٹی کے بیس ارکان کو نا اہل قرار دینے کی سفارش کی ہے ۔ ان بیس ارکان کو صدر مملکت کسی بھی وقت نا اہل قرار دے سکتے ہیں ۔

  • را کے بانی کاو: ’آپ نہ ہوتے تو 1971 بھی نہ ہوتا‘

    را کے بانی کاو: ’آپ نہ ہوتے تو 1971 بھی نہ ہوتا‘

    انڈین انٹیلی جنس ادارے را کے بانی رمیشور ناتھ کاو کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ انھوں نے پاکستان اور انڈیا کے مابین 1971 کی جنگ میں کلیدی کردار ادا کیا تھا۔

  • لائن آف کنٹرول پر فائرنگ سے انڈین سپاہی سمیت تین ہلاک‘

    لائن آف کنٹرول پر فائرنگ سے انڈین سپاہی سمیت تین ہلاک‘

    انڈیا میں حکام کا کہنا ہے کہ کشمیر کے متازع علاقے میں پاکستانی فوجیوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں تین عام شہریوں سمیت سکیورٹی فورسز کا ایک رکن ہلاک ہو گیا ہے۔

  • انڈیا: ’گاڑیوں کو آگ لگانے والا‘ ڈاکٹر گرفتار

    انڈیا: ’گاڑیوں کو آگ لگانے والا‘ ڈاکٹر گرفتار

    انڈیا کی جنوبی ریاست کرناٹکا میں ایک ڈاکٹر کو گذشتہ چند روز کے دوران 25 گاڑیوں کو آگ لگانے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

  • ’مجھے پنجابی ہونے پر فخر ہے لیکن اردو میرا عشق ہے: ہر کرشن لال

    ’مجھے پنجابی ہونے پر فخر ہے لیکن اردو میرا عشق ہے: ہر کرشن لال

    انڈیا کے پنجاب میں 41 سال سے اردو زبان پڑھانے والے ہر کرشن لال کی اردو زبان سے بے غرض محبت۔

  • ’میں ہندوؤں کے نہیں مودی کے خلاف ہوں‘

    ’میں ہندوؤں کے نہیں مودی کے خلاف ہوں‘

    اہم اور حساس موضوعات پر کھل کر بات کرنے والے اداکار پرکاش راج ایک بار پھر سوشل میڈیا پر ٹرولز کے نشانے پر ہیں جبکہ ان کا کہنا ہے کہ وہ ہندوؤں کے نہیں بلکہ مودی اور امت شاہ کے خلاف ہیں۔

  • دہلی: سرکاری سکولوں میں نگرانی کے لیے کیمرے نصب

    دہلی: سرکاری سکولوں میں نگرانی کے لیے کیمرے نصب

    انڈیا کے دارالحکومت دلی کے سرکاری سکولوں میں کیمرے لگائے جا رہے ہیں تاکہ والدین اب سکول کے اوقات میں کلاس روم میں موجود اپنے بچوں کو براہ راست دیکھ سکیں۔

South Asia News in Urdu

American News in Urdu
  • امریکی فوج کا لڑاکا ہیلی کاپٹر گر کر تباہ، دو اہلکار ہلاک

    امریکی فوج کا لڑاکا ہیلی کاپٹر گر کر تباہ، دو اہلکار ہلاک

    امریکہ کی  فوج کا ایک لڑاکا ہیلی کاپٹر کیلیفورنیا کے علاقے میں گر کر تباہ ہو گیا جس کے نتیجے میں اس پر سوار دو فوجی اہلکار ہلاک ہو گئے۔ فوج کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل جیسن برآؤن نے ایک بیان میں کہا کہ جنوبی کیلیفورنیا میں فورٹ ارون میں واقع قومی تربیتی مرکز میں اے ایچ 64 اپاچی ہیلی کاپٹر کے گر کر تباہ ہونے کے معاملے کی  تحقیقات جاری ہے۔ فوج کی ایک دوسرے ترجمان نے خبررساں ادارے روئٹرز کو بتایا کہ ہیلی کاپٹر کا پائلٹ اور معاون پائلٹ ہلاک ہو گئے ہیں تاہم انہوں نے کہا کہ ان کے خاندانوں کو اطلاع دینے سے پہلے ان کے نام ظاہر نہیں کیے جا سکتے ۔ فورٹ کارسن میں فوج کی ترجمان برینڈی گل نے کہا کہ اس ہیلی کاپٹرکا عملہ فورٹ کارسن کولوراڈو میں تعینات تھا اور وہ تربیتی امور میں شرکت کے لیے موآوی صحرا میں مقیم تھے۔  گل نے مزید کہا کہ کہ ہیلی کاپٹر مقامی وقت کے مطابق صبح ایک بجے گر کر تباہ ہوا۔

  • امریکی حکومت کا شٹ ڈاؤن، عارضی اخراجات بل پر ووٹنگ پیر کو طے

    امریکی حکومت کا شٹ ڈاؤن، عارضی اخراجات بل پر ووٹنگ پیر کو طے

    امریکہ میں ریپبلکن اور ڈیموکریٹ قانون ساز سرکاری اخراجات کے بل پر اتفاق نہ ہونے کا الزام ایک دوسرے پر عائد کر رہے ہیں اور یہ سیاسی تعطل ہفتہ کو بھی جوں کا توں رہا۔ سینیٹ میں اکثریتی راہنما مچ مکونل نے ہفتہ کو دیر گئے کہا کہ انھوں نے حکومت کو آٹھ فروری تک اپنے امور کی ادائیگی کے لیے اخراجات کے نئے بل پر رائے شماری کے لیے پیر ایک بجے علی الصبح کا وقت رکھا ہے۔ جمعہ کو نصف شب اس بل پر اتفاق نہ ہونے کے باعث جزوی شٹ ڈاؤن کا آغاز ہو گیا تھا جس کے بعد سوائے انتہائی ضروری سرکاری امور کے علاوہ دیگر کارکنان کو رخصت پر بھیج دیا گیا تھا۔ قانون سازوں کے درمیان دفاعی اخراجات اور امیگریشن کے معاملات بشمول وہ قانون سازی جس کے ذریعے ان تقریباً آٹھ لاکھ غیرقانونی تارکین وطن نوجوانوں کو تحفظ فراہم کرنا ہے جو بچپن میں امریکہ آئے تھے، اختلافات پائے جاتے ہیں۔ سینیٹرز نے ہفتہ کی دوپہر اخراجات کے عارضی بل پر دوبارہ بحث کا آغاز کیا تھا۔ تاہم ڈیموکریٹک سینیٹر ٹیمی بالڈون اخراجات کے ان عارضی بلوں پر یہ کہہ کر معترض تھیں کہ سب صرف وقت گزاری کے لیے ہے اور اس سے امریکی عوام کے لیے خدمات انجام نہیں دی جا سکتیں۔ ریپبلکن سینیٹر لنڈسی گراہم نے ٹوئٹر پر ایک بیان میں کہا کہ "مجھے معلوم ہے کہ ایک بہت برا لگ رہا ہے لیکن بہت سے سینیٹرز خیرسگالی کے ساتھ اس مسئلے کو حل کرنا چاہتے ہیں۔" ادھر وائٹ ہاؤس کی ترجمان سارہ ہکابی سینڈرز نے ہفتہ کو ایک بیان میں کہا کہ "صدر اس وقت تک امیگریشن اصلاحات پر مذاکرات نہیں کریں گے جب کہ ڈیموکریٹس یہ کھیل بند نہیں کرتے اور حکومت کو دوبارہ نہیں کھولتے۔" اسی اثنا میں وفاقی اداروں نے اپنے ہاں غیر اہم ملازمتوں پر مامور لوگوں کو رخصت پر بھیجنا شروع کر دیا ہے۔

  • خواتین کا امریکہ میں اپنے حقوق کے لیے بڑا مظاہرہ

    خواتین کا امریکہ میں اپنے حقوق کے لیے بڑا مظاہرہ

    ایک سال بعد  20 کو ہفتے کے روز ایک بار پھر امریکہ بھی میں خواتین اپنے حقوق اور  جنسی  طور پر ہراساں کیے جانے کے واقعات کے خلاف اکھٹی ہوئیں۔

  • امریکی حکومت کے جزوی

    امریکی حکومت کے جزوی 'شٹ ڈاؤن' کا آغاز

    امریکہ کے سرکاری اخراجات کے بل پر سینیٹ میں اتفاق رائے نہ ہونے کے باعث نصف شب کے بعد امریکی حکومت کو 'جزوی شٹ ڈاؤن' کا سامنا کرنا پڑا ہے جس کے باعث کاروبار حکومت کے غیر ضروری امور معطل ہو گئے ہیں۔ 100 ارکان والے ایوان میں اس بل کی منظوری کے لیے 60 ووٹ درکار ہوتے ہیں لیکن طویل بحث و مباحثے اور مذاکرات کے بعد بھی اس پر اتفاق نہ ہو سکا اور اسبل کے حق میں 50 اور مخالفت میں 49 ووٹ آئے۔ اس بل کے ذریعے حکومت کو آئندہ ماہ کی 16 تاریخ تک اخراجات کے بجٹ کی اجازت دی جانی تھی۔ وائٹ ہاؤس نے اس پر اپنے فوری ردعمل میں کا اظہار کرتے ہوئے اس کی ذمہ داری ڈیموکریٹک سینیٹرز پر عائد کی اور اسے "شومر شٹ ڈاؤن" قرار دیا۔  بیان میں ان قانون سازوں پر الزام عائد کیا گیا کہ انھوں نے غیر قانونی تارکین وطن کو جائز امریکی شہریوں پر فوقیت دی۔ ترجمان سارہ سینڈرز نے کہا کہ "انھوں نے سیاست کو ہماری قومی سلامتی، عسکری خاندانوں، بچوں اور تمام امریکیوں کی خدمت کرنے کی ہماری قابلیت پر فوقیت دی۔" قبل ازیں سینیٹ میں ڈیموکریٹک لیڈر چک شومر کی اس بارے میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ہونے والی بات چیت میں پیش رفت نہیں ہو سکی تھی۔ ڈیموکریٹ ارکان نے اس بل کی مخالف کی کیونکہ وہ ان لاکھوں نوجوان تارکین وطن کو تحفظ دینے کے حق میں جنہیں ٹرمپ انتظامیہ غیر قانونی قرار دے کر ان کے خلاف سخت رویہ اپنائے ہوئے ہے۔

  • 'امریکی دفاعی پالیسی کی توجہ کا مرکز اب دہشت گردی نہیں'

    امریکہ نے کہا ہے کہ اس کی قومی دفاعی حکمت عملی کی توجہ دہشت گردی کی بجائے ان کے بقول "طاقت کے عظیم مقابلے" کی طرف منتقل ہو رہی ہے۔ امریکی وزیر دفاع جم میٹس نے یہ بات پینٹاگون کی "قومی دفاعی حکمت عملی" کا اعلان کرتے ہوئے کہی۔ یہ پالیسی عسکری حوالوں سے آنے والے سالوں میں امریکہ کے خدوخال مرتب کرنے میں مدد دیتی ہے۔ اپنے خطاب میں انھوں نے عندیہ دیا کہ امریکی محکمہ دفاع اپنی توجہ دہشت گردی سے ہٹا رہا ہے جو ان کے بقول 17 سالوں سے امریکی منصوبہ سازوں کو مصروف رکھے ہوئے تھی۔ "ہم دہشت گردوں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کی اپنی مہم جاری رکھیں گے لیکن اب امریکی قومی سلامتی کی بنیادی توجہ طاقت کے عظیم مقابلے پر ہوگی نہ کہ دہشت گردی پر۔" جم میٹس نے چین اور روس کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہ دونوں دنیا کو "طاقت کے محور کے مطابق" قائم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ امریکی وزیر دفاع نے کہا کہ "روس نے اپنی قریبی ریاستوں کی سرحدوں کی خلاف ورزیاں کی اور اپنے ہمسایوں کی اقتصادی، سفارتی اور سلامتی کے امور پر اقوام متحدہ میں اپنے ویٹّو کی طاقت کا سہارا لیا۔" چین کے بارے میں انھوں نے کہا کہ "چین اقتصادیات کو استعمال کرتے ہوئے اسٹریٹیجک مسابقت اختیار کے ذریعے اپنے ہمسایوں کے لیے خطرہ ہے جب کہ بحیرہ جنوبی چین میں عسکری موجودگی کو بڑھا رہا ہے۔" روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے اس پالیسی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اسے "تصادم" کی پالیسی قرار دیا اور کہا کہ امریکی فوجی حکام کی طرف سے اپنے بڑے فاعی اخراجات کو تحفظ دینے کی کوشش ہے۔ روسی سرکاری خبر رساں ایجنسی 'تاس' کے مطابق لاوروف نے کہا کہ "ہمیں افسوس ہے بین الاقوامی قانون کو استعمال میں لاتے ہوئے مذاکرات کی بجائے امریکہ اپنی قیادت کو تصادم کی حکمت عملی سے ثابت کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔" پینٹاگون نے اپنی دفاعی حکمت عملی میں ایران اور شمالی کوریا کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ پیانگ یانگ کے خطرے سے نمٹنے کے لیے امریکی میزائل دفاع نظاموں کی ضرورت ہے۔ اس کے مطابق ایران "مسلسل تشدد کے بیج بوتے ہوئے مشرق وسطیٰ کے استحکام کے لیے بدستور ایک بڑا خطرہ ہے۔"

  • افغان طالبان حکومت کے ساتھ امن مذاکرات کریں: امریکی اہل کار

    افغان طالبان حکومت کے ساتھ امن مذاکرات کریں: امریکی اہل کار

    سلیوان نے کونسل کو بتایا کہ ’’ہم پاکستان کے ساتھ پیوستگی اور مؤثر طور پر کام کرنے کے خواہاں ہیں۔ لیکن، اگر حالات جوں کے توں رہے تو کامیابی حاصل نہیں ہوگی؛ یوں کہ ملک کی سرحدوں کے اندر دہشت گرد تنظیموں کی محفوظ پناہ گاہیں ہوں، جنھیں جاری رکھنے کی اجازت دی جاتی رہے‘‘

  • پینس مشرق وسطیٰ کے دورے پر روانہ

    پینس مشرق وسطیٰ کے دورے پر روانہ

    جب سے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے فیصلے کا اعلان کیا، جس کی عالمی سربراہان نے مذمت کی، وہ خطے کا دورہ کرنے والے انتظامیہ کے پہلے اعلیٰ عہدے دار ہیں۔

  • میری انتظامیہ ہمیشہ زندگی کی قدر کے حق کا دفاع کرے گی: ٹرمپ

    میری انتظامیہ ہمیشہ زندگی کی قدر کے حق کا دفاع کرے گی: ٹرمپ

    اس سے قبل، ٹرمپ نے 19 جنوری کو ’’انسانی وجود کی حرمت کا قومی دِن‘‘ منانے کا اعلان کیا تھا۔ رونالڈ ریگن نے 1987 اور جارج ڈبلیو بش نے 2003اور 2004 میں تقریب سے خطاب کیا تھا

  • حافظ سعید کے خلاف مقدمہ چلنا چاہیے: امریکی محکمہٴخارجہ

    حافظ سعید کے خلاف مقدمہ چلنا چاہیے: امریکی محکمہٴخارجہ

    ترجمان ہیدر نوئرٹ نے جمعرات کے روز اخباری بریفنگ کے دوران ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ ’’ہم سمجھتے ہیں کہ وہ 2008ء کے ممبئی حملوں کا سرغنہ ہے، جس میں متعدد افراد ہلاک ہوئے، جن میں امریکی بھی شامل ہیں‘‘